آغا سراج درانی کی گرفتاری سندھ اسمبلی پر حملہ،نیب وفاقی حکومت کے زیر اثر،ہم چاہیں تو سندھ بند کرسکتے ہیں:سینیٹر عاجز دھامرا

آغا سراج درانی کی گرفتاری سندھ اسمبلی پر حملہ،نیب وفاقی حکومت کے زیر اثر،ہم ...
آغا سراج درانی کی گرفتاری سندھ اسمبلی پر حملہ،نیب وفاقی حکومت کے زیر اثر،ہم چاہیں تو سندھ بند کرسکتے ہیں:سینیٹر عاجز دھامرا

  

حیدرآباد(ڈیلی پاکستان آن لائن)پاکستان پیپلزپارٹی کے صوبائی سیکریٹری اطلاعات سینیٹر  عاجز دھامراہ نے کہاکہ سپیکر سندھ اسمبلی آغا سراج درانی کی گرفتاری سندھ اسمبلی پر حملہ ہے،1988ء جیسے حالات پیدا کرنے کی سازش کی جارہی ہے ،نیب وفاقی حکومت کے زیر اثر ہے،ہم چاہیں تو اگلی صبح ہی سندھ کو بند کرسکتے ہیں ، پی پی جمہوریت پسند پرامن جماعت ہے جو پرامن راستہ اختیار کرے گی،سراج درانی کی گرفتاری پر سندھ اسمبلی سمیت دیگر فلور پر احتجاج کیاجائے گا ۔

 پتافی ہاؤس حیدرآباد میں ہنگامی پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے سینیٹر عاجز دھامرا کا کہنا تھا کہ سپیکر سندھ اسمبلی کی اسلام آباد میں گرفتاری کو  پاکستان کی خالق سندھ اسمبلی میں حملہ سمجھتے ہیں، ان کی گرفتاری کا مقصد صرف سندھ اسمبلی کو مفلوج کرنا ہے،ہم چاہیں تو صبح ہی پورے سندھ کو بند کردیں لیکن پیپلزپارٹی ایک بڑی جمہوری پارٹی ہے جوپرامن جمہوری حل پر یقین رکھتی ہے۔ انہوں نے کہاکہ سپیکر سندھ  اسمبلی کی گرفتاری سے ظاہر ہوتا ہے  صوبائی حکومت کے مزید لوگوں کی گرفتاریاں ممکن ہیں، وفاقی حکومت ہمیں ایک بڑی مزاحمت تحریک پر مجبور کررہی ہے،  پیپلزپارٹی اپنی سابقہ روایت کو برقرار رکھتے ہوئے پرامن راستہ اختیار کرے گی۔ انہوں نے کہاکہ ایک مرتبہ پھرملک کو1988ء کی طرف دھکیلا جارہا ہے، جعلی احتساب کے نام پر پی پی کی صوبائی منتخب حکومت پر شب خون مارنے کی تیاریاں کی جارہی ہیں، کتنی ہی شخصیات کے خلا ف نیب ریفرنسسز موجود ہیں لیکن ان کے خلاف کارروائی کیوں نہیں کی جارہی؟  توپوں کا رخ صرف پی پی کی جانب سے ہی کیوں ہے ؟۔

انہوں نے کہاکہ نیب قانونی کارروائی کرے تو ہمیں  کوئی اعتراض نہیں ہے لیکن چیئرمین نیب کی حکمرانوں سے ملاقاتیں شکوک پیدا کررہی ہیں۔ انہوں نے کہاکہ عمران خان کے ایما پر کاروائی کی گئی ہے ،سپیکر سندھ اسمبلی کے اہل خانہ کو آٹھ گھنٹے تک تلاشی کے نام پر یرغمال بنایا گیا،جس سے اندازہ ہوتا ہے کہ نیب وفاقی حکومت کے زیر اثر ہے۔ انہوں نے الزام عائد کیا کہ نیب وزیر اعظم سمیت وزراء سے ملی ہوئی ہے،سپیکر سندھ اسمبلی کی گرفتاری پوری اسمبلی کے اراکین کی توہین ہے، پیپلزپارٹی میں بھرپور  طاقت ہے اور وہ چاہئے تو ایک اعلان پر بہت کچھ کرسکتی ہے  لیکن ہم حکمرانوں کی یہ سازش کامیاب نہیں ہونے دیں گے کہ سندھ میں افراتفری پھیلے۔  انہوں نے کہاکہ نیب اپنی اہمیت کھو چکی ہے ،یہ غیر جانبدار ادارہ نہیں رہا، نیب کے حوالے سے اعلی عدالیہ کے ریمارکس بھی سب کے سامنے ہیں۔ انہوں نے کہاکہ سراج درانی کی گرفتاری سے سندھ کو یہ پیغام دیا جارہاہے کہ ہمیں مزید لاشیں ملتی رہیں گی، وفاقی حکومت نے سندھ میں پی پی کے خلا ف جو فاروڈ بلاک کی فلم شروع کی ہے،سپیکر سندھ اسمبلی کی گرفتاری اس کی ایک کڑی ہے ۔ انہوں نے کہاکہ نیب کو عمران خان کی بہن علیمہ خان کی کرپشن نظر نہیں آتی ،اگر سپیکر سندھ اسمبلی پر کیس ہے تو سپیکر پنجاب اسمبلی پر بھی کیس ہیں، ان کو گرفتار کیوں نہیں کیاجاتا؟۔

مزید :

علاقائی -سندھ -حیدرآباد -