ویلکم پی ایس ایل فائیو، کراچی میں جشن سے آغاز، ملک بھر میں جوش وخروش، افتتاحی میچ میں کوئٹہ نے اسلام آباد کو شکست دیدی

ویلکم پی ایس ایل فائیو، کراچی میں جشن سے آغاز، ملک بھر میں جوش وخروش، ...

  



کراچی (سٹاف رپورٹر،مانٹیرنگ ڈیسکایچ بی ایل پاکستان سپر لیگ کے پانچویں ایڈیشن کا آغاز رنگارنگ تقریب سے ہو گیا ۔جمعرات کی شام نیشنل اسٹیڈیم کراچی میں پاکستان سپر لیگ کی افتتاحی تقریب کا آغاز قومی ترانے سے کیا گیا جس میں اسٹیڈیم میں موجود شائقین کرکٹ کا جوش و جذبہ دیدنی تھا۔تقریب میں میزبانی کے فرائض معروف گلوکار اور کمپیئر فخر عالم انجام دیئے۔اس کے بعد اسٹیڈیم میں موجود بڑی اسکرینز پر ایک ویڈیو چلائی گئی جس میں پاکستان کے تمام صوبوں اور اہم شہروں کی خوبصورت طریقے سے منظر کشی کی گئی۔اس کے بعد علاقائی موسیقی کا خوبصورت مظاہرہ کیا گیا جس نے اسٹیڈیم اور ٹی وی پر دیکھنے والوں کو خوب محظوظ کیا۔افتتاحی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے وزیر اعلی سندھ مراد علی شاہ نے کہا کہ ہم نے گزشتہ سال اپنے سفر کا اختتام پاکستان سپر لیگ کے چوتھے ایڈیشن کے فائنل کے انعقاد کے ساتھ کیا تھا اور آج اس سفر کا دوبارہ آغاز ایچ بی ایل پی ایس ایل کے پانچویں ایڈیشن کی افتتاحی تقریب سے کر رہے ہیں۔انہوں نے کہا کہ2018کے ایونٹ کا فائنل کراچی میں ہوا جس کے بعد 2019 کے ایڈیشن کے تمام میچز کراچی میں منعقد ہوئے جس کا کریڈٹ کراچی کے عوام کو جاتا ہے اور آج ہم کراچی میں افتتاحی تقریب کر رہے ہیں۔انہوں نے کہا کہ میں پاکستان کرکٹ بورڈ کا بہت شکر گزار ہوں جنہوں نے ہماری درخواست پر ہمیں پاکستان سپر لیگ کے میچز کی میزبانی دی۔چیئرمین پاکستان کرکٹ بورڈ احسان مانی نے تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ 17مارچ2019 کو ہم نے وعدہ کیا تھا کہ ہم پورا سال ایچ بی ایل پی ایس ایل پاکستان میں منعقد ہو گا اور وہ وعدہ ہم نے آج پورا کردیا۔انہوں نے کہا کہ اس سال کراچی اور لاہور کے علاوہ راولپنڈی اور ملتان میں بھی میچز کا انعقاد ہو گا اور ہماری کوشش ہو گی کہ اگلے سال پشاور میں بھی میچز کا انعقاد کرائیں۔اس موقع پر انہوں نے پاکستانی عوام، شائقین کرکٹ، اسپانسرز، کرشل پارٹنرز اور میڈیا پارٹنرز کا شکریہ ادا کرتے ہوئے کہا کہ آپ لوگوں کی مدد سے پاکستان سپر لیگ ملک کا سب سے بڑا کھیلوں کا برانڈ بن چکا ہے۔انہوں نے کہا کہ حکومت پاکستان، صوبہ پنجاب اور صوبہ سندھ کی حکومتوں کی مدد کے بغیر ایچ بی ایل پی ایس ایل کے تمام میچز کا پاکستان میں انعقاد ناممکن ہوتا اور میں خصوصی طور پر سیکیورٹی فورسز، قانون نافذ کرنے والے اداروں اور مقامی حکومت کا بھی مشکور ہوں۔احسان مانی نے کہا کہ میں پاکستان کرکٹ بورڈ کی طرف تمام غیرملکی کھلاڑیوں کو خوش آمدید کہتا ہوں اور امید ظاہر کرتا ہوں کہ آپ خوشگوار یادوں کے ساتھ اپنے ملکوں کو واپس لوٹیں گے اور امید ہے کہ ہم اگلے سال پھر آپ کا استقبال کریں گے۔پاکستان سپر لیگ کے اس ایونٹ کی خاص بات یہ ہے کہ اس ایونٹ کے تمام 34 میچز پہلی مرتبہ پاکستان کی سرزمین پر کھیلے جائیں گے اور کراچی، لاہور، راولپنڈی اور ملتان میں کھیلے جائیں گے۔تقریب میں ایچ بی ایل پی ایس ایل کے آفیشل گانے میں سر کا جادو جگانے والے چاروں گلوکار علی عظمت، عارف لوہار، عاصم اظہر اور ہارون سمیت 350 فنکاروں اپنے فن کا مظاہرہ کیا۔پاکستان سپر لیگ کے پانچویں ایڈیشن میں 10لاکھ ڈالرز کی انعامی رقم تقسیم کی جائے گی اور فاتح ٹیم کو 5لاکھ ڈالرز بطور انعام دیے جائیں گے۔پی ایس ایل فائیو کے پہلے میچ میں کوئٹہ گلیڈی ایٹرز نے، اسلام آباد یونائیٹڈ کو شکست سے دو چار کر دیااسلام آباد یونائیٹڈ نے پہلے بلے بازی کرتے ہوئے انیس اعشاریہ ایک اوورز میں 168 رنز بنائے تھے۔ کوئٹہ گلیڈی ایٹرز کی جانب سے محمد حسنین کامیاب باؤلر رہے جنہوں نے 4 وکٹیں حاصل کیں۔نیشنل کرکٹ سٹیڈیم کراچی میں کھیلے گئے پی ایس ایل فائیو کے افتتاحی میچ میں کوئٹہ گلیڈی ایٹرز نے ٹاس جیت کر اسلام آباد یونائیٹڈ کو بیٹنگ کی دعوت دی تھی۔اسلام آباد یونائیڈ کی جانب سے منرو اور رونچی بڑا سکور بنانے کا جذبہ لیے میدان میں اترے لیکن محمد نواز نے ان کی امیدوں پر پانی پھیر دیا۔ انہوں نے اپنی ہی گیند پر کیچ لیا اور منرو کو صفر پر آؤٹ کرکے پویلین کی راہ دکھائی۔اسلام آباد یونائیٹڈ کی دوسری وکٹ 38 پر گری جب سہیل خان نے قدرے جارحانہ بلے باز کر رہے رونچی کو آؤٹ کر دیا۔ رونچی نے 13 گیندوں کا سامنا کرتے ہوئے ایک چھکے اور 4 چوکوں کی مدد سے 23 رنز بنائے۔ ان کا کیچ احمد شہزاد نے لیا۔تیسرے آؤٹ ہونے والے کھلاڑی حسین طلعت تھے جو محمد حسنین کی گیند کا شکار بنے۔ انہوں نے 22 گیندوں کا سامنا کرتے ہوئے ایک چوکے کی مدد سے 19 رنز بنائے۔ ان کا کیچ بھی احمد شہزاد نے پکڑا۔ یونائیٹڈ کی جانب سے ڈی جے میلان نے شاندار اننگز کھیلی، انہوں نے 40 گیندوں کا سامنا کرتے ہوئے پانچ چوکوں اور تین چھکوں کی مدد سے 64 رنز کی جارحانہ اننگز کھیلی۔ ان کی وکٹ کٹنگ کے حصے میں آئی۔ پانچویں آؤٹ ہونے والے کھلاڑی انگرام تھے جو صرف 6 رنز بنا سکے جبکہ چھٹے آؤٹ ہونے والے بلے باز محمد آصف تھے جو 19رنز بنا سکے۔ساتویں آؤٹ ہونے والے کھلاڑی کپتان شاداب خان تھے جو صرف 8 رنز بنا کر واپس پویلین پہنچے۔ان کی وکٹ بھی کٹنگ نے لی۔ اس کے فوری بعد ہی فہیم اشرف بھی آؤٹ ہو گئے، انہوں نے 20 رنز بنائے۔ نویں آؤٹ ہونے والے بلے باز محمد موسیٰ تھے بغیر رن بنائے کیچ آؤٹ ہو گئے۔ آخری آؤٹ ہونے والے کھلاڑی عماد بٹ بھی بغیر کوئی رن بنائے واپس پہنچے۔کوئٹہ گلیڈٰی ایٹرز کی جانب سے محمد حسنین نے شاندار گیند بازی کا مظاہرہ کرتے ہوئے چار اوورز میں صرف 25 رنز دے کر 4 وکٹیں حاصل کیں۔ دیگر گیند بازوں میں کٹنگ نے 3، سہیل خان نے دو جبکہ محمد نواز نے ایک وکٹ حاصل کی۔ اسلام ا?باد یونائیٹڈ نے مقررہ بیس اوورز میں کوئٹہ گلیڈی ایٹرز کو جیت کیلئے 169 رنز کا ہدف دیا تھا۔کوئٹہ گلیڈٰی ایٹرز کا آغاز بھی بالکل اسلام آباد یونائیٹڈ جیسا ہی تھا کیونکہ ان کا بھی پہلا کھلاڑی اننگز کے شروع میں ہی بغیر کوئی رن بنائے آؤٹ ہو گیا۔ محمد موسیٰ نے اوور کی پہلی ہی گیند پر جیسن روئے کو ایل بی ڈبلیو کردیا۔گلیڈٰی ایٹرز کی جانب سے اعظم خان واحد بلے باز تھے جنہوں نے یونائیٹڈ کے گیند بازوں کا خوبی سے مقابلہ کیا اور اپنی نصف سنچری بنانے میں کامیاب رہے۔ انہوں نے 33 گیندوں کا سامنا کرتے ہوئے پانچ چوکوں اور 3 چھکوں کی مدد سے 59 رنز کی اننگز کھیلی۔ان کے علاوہ دیگر بلے بازوں میں واٹسن 15، احمد شہزاد 7، کپتان سرفراز احمد 21، محمد نواز 23، سہیل خان 18 جبکہ کٹنگ نے 22 رنز بنائے اور ناٹ ا?ؤٹ رہے۔ گلیڈی ایٹرز نے اٹھارہ اعشاریہ تین اوورز میں 171 رنز بنا کر پاکستان سپر لیگ فائیو کا افتتاحی میچ اپنے نام کیا اور اسلام آباد یونائیٹڈ کو تین وکٹوں سے ہرایا

اسلام آباد شکست

مزید : صفحہ اول