بجلی اور گیس کی قیمتیں مزیدنہ بڑھانے، دالیں سستی کرنیکا فیصلہ، آئندہ کوئی چیز مہنگی نہیں کی جائے گی: عمران خان

    بجلی اور گیس کی قیمتیں مزیدنہ بڑھانے، دالیں سستی کرنیکا فیصلہ، آئندہ ...

  



اسلام آباد(سٹاف رپورٹر،آئی این پی) وفاقی کابینہ نے بجلی اور گیس کی قیمتیں مزید نہ بڑھانے، آٹا،چینی بحران کی وجوہات سامنے لانے،دالوں کی قیمتوں میں کمی اور عوام کو ریلیف دینے کا فیصلہ کرلیا ، چینی کی قیمتوں میں اضافے پر ایف آئی اے کو دو ہفتوں میں انکوائری مکمل کرنے کی ہدایت کر دی، گندم بحران پر رپورٹ ایک ہفتے میں پیش کی جائیگی ۔جمعرات کو وزیراعظم عمران خان کی زیر صدارت وفاقی کابینہ کا اجلاس ہوا جس میں 16 نکاتی ایجنڈے پر گفتگو کی گئی،بجلی کی قیمتیں نہ بڑھانے، آٹا،چینی بحران کی وجوہات سامنے لانے،دالوں کی قیمتوں میں کمی اور عوام کو ریلیف دینے کا فیصلہ کیا گیا۔ نجی ٹی وی ذرائع کے مطابق اجلاس کے دوران وزیراعظم عمران خان کو آٹا، چینی،دالوں اور اشیاء خورونوش کی قیمتوں میں اضافے اورمہنگائی میں کمی کیلئے حکومتی اقدامات سے متعلق بریفنگ دی گئی۔وزیراعظم عمران خان نے دالوں کی قیمتوں میں عوام کو ریلیف دینے اور دالوں پر امپورٹ ڈیوٹی میں کمی لانے کیلئے لائحہ عمل مرتب کرنے کی ہدایت کرتے ہوئے کہا کہ آئندہ کوئی چیز مہنگی نہیں کی جائے گی۔وزیراعظم عمران خان نے کہا کہ اشیائے خورونوش کی قیمتوں میں مزید کمی لائی جائے، مہنگائی،کھانے پینے کی اشیاء میں ملاوٹ اور ذخیرہ اندوزی برداشت نہیں کی جائیگی۔ کمشنر ایس ای سی پی کی تعیناتی کا ایجنڈا مؤخر کردیا گیا،احساس پروگرام میں اراکین پارلیمنٹ کو شامل کرنے سے متعلق بریفنگ مؤخر کردی گئی۔ ذرائع کے مطابق وفاقی حکومت نے خالد جاوید کو نیا اٹارنی جنرل بنانے کا فیصلہ کیا۔وفاقی کابینہ نے متعدد ایجنڈا آئٹمز کی منطوری دیدی۔اجلاس میں اس بات پر اتفاق کیا گیا کہ بجلی اور گیس کی قیمتیں نہیں بڑھائی جائیں گی۔ذرائع کے مطابق اس بار بھی کابینہ اجلاس میں اتحادی جماعتوں کے وزراء غیر حاضر رہے، (ق) لیگ کے طارق بشیر چیمہ اور ایم کیو ایم کے خالد مقبول صدیقی اجلاس میں شریک نہ ہوسکے۔اجلاس میں فیصلہ کیا گیا کہ گندم بحران پر رپورٹ ایک ہفتے میں پیش کی جائیگی، چینی کی قیمتوں میں اضافے پر ایف آئی اے کو دو ہفتوں میں انکوائری مکمل کرنے کی ہدایات جاری کردی گئیں۔ وزیراعظم عمران خان نے پارٹی ترجمانوں کو سخت ہدایات جاری کرتے ہوئے کہا عدلیہ کا احترام سب سے مقدم ہے، کسی بھی قسم کی بیان بازی ہرگز برداشت نہیں کی جائے گی، ڈسپلن کی خلاف وزری پر سخت کارروائی ہوگی۔دوسری جانب وزیراعظم عمران خان سے قانونی ٹیم کے ارکان نے ملاقات کی جس میں وزیر قانون فروغ نسیم، سابق وزیر قانون بابر اعوان، بیرسٹر علی ظفر اور شہزاد اکبر شامل تھے، ملاقات میں مختلف قانونی امور پر مشاورت کی گئی۔وزیراعظم عمران خان نے چینی صدر شی جن پنگ کو ٹیلی فون کرکے کرونا وائرس سے قیمتی جانوں کے ضیاع پر افسوس کا اظہار کیا ہے۔وزیراعظم عمران خان کا کہنا تھا کہ حکومت پاکستان اور عوام کرونا وائرس کے خاتمے کی کوششوں میں چین کے ساتھ ہیں۔ امید ہے کہ چین پاکستانی شہریوں اور طلبہ کی خصوصی دیکھ بھال جاری رکھے گا۔وزیراعظم نے کہا کہ چین کی جانب سے کرونا وائرس کے تدارک کے لیے فوری اور موثر اقدامات کو دنیا بھر میں سراہا گیا۔ چینی عوام کی مدد کیلئے پاکستانی ڈاکٹرز اور فیلڈ ہسپتال بھجوانے کو تیار ہیں۔ چین صدر شی جن پنگ کی قیادت میں کرونا وائرس پر قابو پانے میں کامیاب ہوگا۔چینی صدر نے مشکل کی گھڑی میں پاکستان کی حمایت پر شکریہ ادا کرتے ہوئے کہا کہ چین کرونا وائرس کے خلاف بروقت اور تیز ترین اقدامات کر رہا ہے۔ چینی عوام کرونا وائرس کے خلاف جنگ میں فتح حاصل کریں گے۔ان کا کہنا تھا کہ پاکستانی طلبہ کا اپنے شہریوں کی طرح دیکھ بھال اور علاج کیا جا رہا ہے۔ وزیراعظم عمران خان نے رجب طیب اردوان ہسپتال ٹرسٹ کی صحت کے شعبہ میں خدمات کو سراہتے ہوئے کہا ہے کہ ٹرسٹ کی بے سہارا، غریب اور نادار لوگوں کو پناہ گاہوں میں سہولیات اور کھانے کی فراہمی خوش آئند ہے، مخیر حضرات کی جانب سے بیمار، بے سہارا اور نادار افراد کی خدمت لائق تحسین ہے۔جمعرات کووزیر اعظم سے رجب طیب اردوان ہسپتال ٹرسٹ کے چیئرمین خواجہ عمر فاروق اور فاؤنڈنگ چیئرمین میاں محمد احسن کی قیادت میں وفد نے ملاقات کی۔ وفد نے وزیراعظم کو ٹرسٹ کی صحت کے شعبہ میں خدمات اور وزیراعظم کے پناہ گاہ پروگرام لاہور کے حوالہ سے مختلف امور پر آگاہ کیا۔ رجب طیب اردگان ہسپتال ٹرسٹ پبلک پرائیویٹ پارٹنرشپ کے تحت سات ہسپتالوں اور دو علاقائی بلڈ سینٹرز میں علاج معالجہ کی سہولیات فراہم کر رہا ہے۔ وفد نے وزیراعظم کو آگاہ کیا کہ گذشتہ سال لاکھوں مریض ٹرسٹ کے مختلف ہسپتالوں میں مفت علاج سے مستفید ہوئے اور لاہور کی پناہ گاہوں میں روزانہ کی بنیاد پر ہزاروں افراد کو مفت کھانا فراہم کیا جا رہا ہے۔ وزیراعظم عمران خان نے رجب طیب اردوان ہسپتال ٹرسٹ کی صحت کے شعبہ میں خدمات کو سراہا اور ٹرسٹ کی بے سہارا، غریب اور نادار لوگوں کو پناہ گاہوں میں سہولیات اور کھانے کی فراہمی کی حوصلہ افزائی کی۔ انہوں نے کہاکہ مخیر حضرات کی جانب سے بیمار، بے سہارا اور نادار افراد کی خدمت لائق تحسین ہے۔ وزیراعظم نے وفد کو حکومت کی جانب سے بھرپور تعاون اور معاونت کی یقین دہانی کرائی اور کہا کہ ٹرسٹ کا انسانی خدمت کا جذبہ معاشرے کے دوسرے طبقات کے لئے قابل تقلید ہے۔

وفاقی کابینہ

مزید : صفحہ اول