غریب طلباء کو مفت تعلیم کی فراہمی اولین ترجیح ہے،فضل حکیم خان

غریب طلباء کو مفت تعلیم کی فراہمی اولین ترجیح ہے،فضل حکیم خان

  



  

پشاور(سٹاف رپورٹر)وزیر اعلیٰ خیبر پختونخوا محمود خان نے ایک اور وعدہ پورا کردیا، واوٗچر سکولوں کی مد میں دس کروڑ روپے جاری، ڈیڈک چیئرمین سوات نے لاکھوں روپے کے چیک تقسیم کردیئے، صوبے کے غریب طلباء کو مفت تعلیم اور یونیفارم کی فراہمی اولین ترجیح ہے، فضل حکیم خان نے کہا کہ سوات کے 136واوچرز سکولوں میں تقریباً 4000طلباء و طالبات زیر تعلیم ہیں جنکو صوبائی حکومت کی جانب سے مفت تعلیم، کتابیں اور یونیفارم فراہم کیا جارہاہے اور ان اسکولوں کے کروڑوں روپے قابل ادائیگی ہیں، اس سلسلے میں آل پرائیویٹ پارٹنرز سکول کے مالکان نے وزیر اعلیٰ خیبر پختونخوا محمود خان سے ملاقات کی تھی جس میں وزیر اعلیٰ محمود خان نے ان کو ادائیگی کا وعدہ کیا تھا، جس کو گزشتہ روز انہوں نے پورا کرتے ہوئے رقم ریلیز کردی، اس سلسلے میں دیڈک افس سوات میں اجلاس ہوا جس میں واوچرز سکولز مالکان، ڈسٹرکٹ پروگرام آفیسر طلعت شاہ سمیت دیگر نے شرکت کی، اس موقع پرانہوں نے واوچر سکول مالکان میں بقایاجات کی مد میں ایک کروڑ چار لاکھ روپے کی رقم تقسیم کی جبکہ پورے صوبے کے لئے دس کروڑ روپے ریلیزکئے گئے ہیں، چیئرمین ڈیڈک کمیٹی فضل حکیم خان نے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ صوبائی حکومت صوبے کے نادار طلباء و طالبات کو مفت تعلیم کی فراہمی سمیت کتابیں اور یونیفارم بھی مفت دے رہی ہے اور صوبے کے 1030واوچرز سکولوں میں 86ہزار نادار طلباء و طالبات زیر تعلیم ہے جنکو مفت تعلیم کتابیں اور یونیفارم دے رہی ہے، انہوں نے کہا کہ یہ شروعات ہے اب جن جن اسکولوں کے بقایات جات ہے ان کو جلد بقایاجات ادا کئے جائیں گے، اس موقع پر ال پرائیویٹ پارٹنرز اسکول ایسو سی ایشن نے وزیر اعلیٰ محمود خان اور ڈیڈک چیئرمین فضل حکیم خان کا شکریہ اد اکیا۔

مزید : پشاورصفحہ آخر