بنوں، 28لاکھ کے ترقیاتی فنڈ ز سے رقم نکالنے کیلئے کا غذی کارروائی کا ا نکشاف

  بنوں، 28لاکھ کے ترقیاتی فنڈ ز سے رقم نکالنے کیلئے کا غذی کارروائی کا ا نکشاف

  



بنوں (تحصیل رپورٹر)سٹی ٹو ڈسٹرکٹ ممبر محمد سجاد خان کی 28لاکھ روپے ترقیاتی منصوبے کا فنڈز ڈسٹرکٹ کونسل دفتر کی طرف سے اور منصوبوں پر رقم نکالنے کی کاغذئی کاروائی تیاری کی انکشاف۔سابق ڈسٹرکٹ ممبر سٹی ٹو سجاد خان زرگرنے 28لاکھ روپے فنڈز کے لئے ڈسٹرکٹ کونسل دفتر کو 22لوگوں کے لئے 6انچ پریشر پمپ اور اسی فنڈز میں 10لاکھ 50ہزار روپے لاگت سے شہزادہ خان وزیر سے لیکر فقیران چوک تک گلی کی پختگی کے لئے منصوبے دئیے لیکن اب ٹھیکیدار ڈسٹرکٹ کونسل دفتراور اسسٹنٹ ڈائریکٹر لوکل گورنمنٹ بنوں کی ملی بھگت سے ہمارے دئیے ہوئے منصوبوں کو مکمل کرنے کی بجائے اور لوگوں کے مکمل منصوبے پر فنڈز کی رقم نکالنا چاہتے ہیں۔اگر ہمارے منصوبے پر اور کسی مکمل ہونے والے منصوبوں پر رقم نکالی گئی تو نہ صرف متعلقہ ٹھیکیدار کے خلاف قانونی چارہ جوئی کرینگے بلکہ اے ڈی بی ڈی دفتر اور افسران کے خلاف بھی قانونی کاروائی عمل میں لائی جائے گی۔ان خیالات کا اظہار سابق ڈسٹرکٹ ممبر سٹی ٹو سجاد خان زرگر نے نیشنل پریس کلب بنوں میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے کہی انہوں نے کہا ہمارے دئیے ہوئے ترقیاتی منصوبے جس میں 6انچ کے 22پریشر پمپ اور ایک گلی شامل ہے۔ڈسٹرکٹ کونسل دفتر کے افسران نے کسی اور کے پریشر پمپ کی جی پی ایس ڈیٹا کو ہمارے منصوبوں میں شامل کرنے کا انکشاف ہوا ہے۔سابق ڈسٹرکٹ ممبر سجاد خان زرگر نے ڈسٹرکٹ کونسل کو فراہم کردی گئی 22لوگوں ناموں کی فہرست میڈیا کے سامنے پیش کر دی جس میں 22پریشر پمپ 6انچ کے فہرست میں جاوید اللہ مروت،حمزہ خان وزیر،مفتی غلام اللہ خان،فرید زرگر علاقہ محلہ نواب۔یسین خان وزیر مسلم آباد،مولانا اعزاز اللہ حقانی یتیم خانہ،زین الدین زرگر چمبیلی چوک،پیر اسد اللہ شاہ محلہ بھٹیہ،گل وارث ایڈوکیٹ،اسماعیل زرگر وزیر ہاوس،ناصر خان محلہ جھنگ،شہاب خان زنانہ ہسپتال،ڈاکٹر دل فداء،منور خان اکبر غلام حلوائی،شیر علی جان پیپل گلی،میر سفیر میلاد پارک،سرفراز خان ٹانچی بازار،پیر انور علی شاہ محلہ گردانلی،مہران خان پھوڑی گیٹ،فیاض خان محلہ قادر چیئرمین، ایوب ایڈوکیٹ زنانہ ہسپتال اور شہزادہ خان وزیر سے لیکر فقیران چوک تک گلی شامل ہیں۔میڈیا بھی جاری ہونے والی فہرست کی تحقیقات کریں اور میرے منصوبوں میں اور ناموں پر رقم نکالنے والے افیسر کو میڈیا کے ذریعے قوم کے سامنے بے نقاب کریں انہوں نے متعلقہ ٹھیکیدار کو بھی تنبیہ کی 22پریشر پمپ اور ایک گلی کے علاوہ اس سے کم منصوبے قبول نہیں۔

مزید : پشاورصفحہ آخر