حکومت فالج کے مریضوں کو صحت کارڈ سکیم میں شامل کرنے کا جائزہ لے: چیف جسٹس لاہور ہائیکورٹ

حکومت فالج کے مریضوں کو صحت کارڈ سکیم میں شامل کرنے کا جائزہ لے: چیف جسٹس ...

  



لاہور(نامہ نگارخصوصی)چیف جسٹس لاہور ہائی کورٹ مسٹر جسٹس مامون رشید شیخ نے حکومت کوہدایت کی ہے کہ فالج سے متاثرہ مریضوں کو بھی صحت کارڈ سکیم میں شامل کرنے کا جائزہ لیاجائے۔ فاضل جج نے یہ ہدایت جان بچانے والی ادویات کی عدم فراہمی کے کیس میں جاری کیں،گزشتہ روز ڈرگ ریگولیٹری اتھارٹی کی طرف سے درخواست کا غیر واضح جواب داخل کرنے کا سخت نوٹس لیتے ہوئے عدالت نے چیف ایگزیکٹو ڈرگ ریگولیٹری اتھارٹی کوطلب کرلیااورریمارکس دیئے کہ عدالت کومطمئن نہ کرنے والوں کوکمرہ عدالت سے جانے نہیں دیا جائے گا۔چیف جسٹس نے اس کیس میں یو ایچ ایس اور ایسوسی ایشن اف فزیشنز اینڈ سرجنز کو بھی نوٹس جاری کر دیئے ہیں جبکہ پاکستان میڈیکل کمیشن کے نمائندے کو آئندہ سماعت پر رپورٹ سمیٹ پیش ہونے کی ہدایت کی ہے،چیف جسٹس نے جان بچانے والی ادویات کی رجسٹریشن کے حوالے سے وفاق اور صوبوں کی جانب سے کی گئی قانونِ سازی کے بارے میں رپورٹ بھی طلب کرلی ہے،فاضل جج نے اس کیس میں پروفیسر ڈاکٹرمحمودشوکت، ڈاکٹر سلمان کاظمی اورعلی قزلباس ایڈووکیٹ کوعدالتی معاون مقررکردیاہے،درخواست گزار وکیل اظہر صدیق نے عدالت میں موقف اختیار کیا کہ جان بچانے والی ادویات مہنگے داموں میڈیکل سٹورز پر فروخت کی جارہی ہیں،،ہسپتالوں میں یہ ادویات میسر نہیں جبکہ کم قیمت ادویات کو رجسٹرڈ نہیں کیا جارہا۔

فالج کے مریض

مزید : صفحہ آخر