واسا حکام کی نااہلی، پولیو وائرس میں مبتلا بچی جان سے ہاتھ دھو بیٹھی

        واسا حکام کی نااہلی، پولیو وائرس میں مبتلا بچی جان سے ہاتھ دھو بیٹھی

  



لاہور (جاوید اقبال)پنجاب حکومت کا لاہور میں پولیو فری مہم کا خواب پورا نہ ہوسکا، واسا کے سیوریج میں وائرس کے سبب زندگیوں کے چراغ گل ہونے لگے، پولیو وائرس سے ساڑھے 4 سالہ بچی جان کی بازی ہار گئی۔تفصیلات کے مطابق صوبائی دارالحکومت میں واساکے سیوریج میں موجود پولیو وائرس سے متاثرہ میشاابرار کو نمونے لینے کے بعد کراچی لے جایا گیا مگروہ جانبر نہ ہوسکی جبکہ اوکاڑہ کی 14 سالہ ایمان وارث کے بھی پولیو میں مبتلا ہونے کی تصدیق ہوئی ہے، ذرائع کے مطابق 14 سالہ ایمان وارث نے بھی لاہور کا سفر کیا جہاں سے پولیو وائرس کا شکار ہوئی۔یہ امر قابل ذکر ہے کہ روزنامہ پاکستان اپنی اشاعت میں مسلسل آگاہ کر رہا ہے کہ واساء کا آلودہ پانی ہیپا ٹائٹس اور پولیو کے پھیلاؤ کا باعث بن رہا ہے لیکن واساء کے کان پر جوں تک نہیں رینگ رہی جبکہ واٹر کمیشن کے چیئرمین جسٹس(ر) علی اکبر قریشی بھی کہ چکے ہیں کہ لاہور کے شہریوں کو سیوریج ملاپانی پینے کو دینا واساء کی ناکامی ہے۔

واسا حکام / نااہلی

مزید : صفحہ آخر