ملک بھر میں سائبر کرائم بڑھتے جا رہے ہیں، قائمہ کمیٹی کو بریفنگ

    ملک بھر میں سائبر کرائم بڑھتے جا رہے ہیں، قائمہ کمیٹی کو بریفنگ

  



اسلام آ باد (آ ئی این پی) قومی اسمبلی کی قائمہ کمیٹی برائے دفاع کو ایف آئی اے حکام نے بریفنگ دیتے ہوئے آ گاہ کیا ہے کہ ملک بھر میں سائبر کرائمز بڑھ رہے ہیں،انٹرنیٹ کے ذریعے بلیک میلنگ،جنسی ہراسگی،پورنو گرافی کے کیسز زیادہ رجسٹرڈ ہیں،چائلڈ پورنو گرافی کا ایک عالمی گینگ پکڑا ہے جس میں ملوث پاکستانی کو سزا بھی ہوچکی ہے،پی ٹی اے کے بعض افراد بغیر ٹیکس لیے موبائل فونز کے ای ایم آئی نمبر ایکٹویٹ کر رہے تھے،اس گینگ کو بھی پکڑ لیا ہے ان کیخلاف انکوائری جاری ہے،سائبر کرائمز کی روک تھام کیلئے ملک بھر میں سینٹرز کی تعداد دس سے بڑھا کر پندرہ کردی ہے،سائبر کرائمز سے متعلق گزشتہ سال 56996 شکایات موصول ہوئیں،گیارہ ہزار 28 کی انکوائری کی گئی اور اس میں سے 1086 کیس رجسٹرڈ کیے گئے۔ جمعرات کو امجد نیازی کی صدارت میں قومی اسمبلی کی قائمہ کمیٹی برائے دفاع کا اجلاس ہوا، سیکرٹری داخلہ کی مسلسل کمیٹی اجلاس میں غیر حاضری پر کمیٹی نے برہمی کا اظہار کیا اور ان کو سخت پیغام بھیجنے کی ہدایت کی۔ ایف آئی اے حکام نے کمیٹی کو آ گاہ کیاکہ ملک بھر میں سائبر کرائمز بڑھ رہے ہیں،سات کروڑ سے زائد افراد انٹرنیٹ استعمال کر رہے ہیں۔فنانشل فراڈ کے کیسز کی تحقیقات کے لیے عدالت سے اجازت لینا پڑتی ہے۔

ایف آئی اے

مزید : صفحہ آخر