خاتون کے قتل میں ملوث 2ملزمان کو جرم ثابت ہونے پر عمر قید

  خاتون کے قتل میں ملوث 2ملزمان کو جرم ثابت ہونے پر عمر قید

  



میلسی (تحصیل رپورٹر) ایڈیشنل ڈسٹرکٹ اینڈ سیشن/ماڈل کریمنل ٹرائیل کورٹ میلسی کے جج محمد جہانگیر اشرف نے جرم ثابت ہونے پر دو ملزموں کو عمر قید اور مجموعی طور پر تین لاکھ روپے جرمانے کی سزا کا حکم سنایا جبکہ دوملزموں کو ناکافی شواہد کی بناء پر بری کردیا گیا استغاثہ کے مطابق بستی میراں پور کے رہائشی واحد بخش کی بیٹی ساجدہ مائی کی شادی 15سال قبل عبدالخالق سے ہوئی جو روز گار کے سلسلے میں سعودی عرب مقیم ہے13مئی 2019 ء کی رات کو حافظ محمد حفیظ کا واحد (بقیہ نمبر39صفحہ12پر)

بخش کو فون آیا کہ تمہاری بیٹی گھر میں موجود نہ ہے واحدبخش نے اپنے ساتھیوں کے ہمراہ اپنی بیٹی ساجدہ مائی کی تلاش شروع کردی لیکن 4 روز بعد اس کی نعش 17 مئی 2019ء کو کھیت سے ملی جسے مبینہ طور پر حافظ محمد حفیظ،غلام مصطفیٰ، یاسین نے تشدد کرکے قتل کر دیا تھا پولیس تھانہ مترو نے مقدمہ درج کر کے دوران تفتیش ایک ملزم ابوالحسن کو بھی نامزد کیا پولیس نے چالان مرتب کرکے عدالت پیش کیا فاضل جج نے جرم ثابت ہونے پر حافظ محمد حفیظ، اور غلام مصطفیٰ کو عمر قید اور ڈیرھ ڈیرھ لاکھ روپے جرمانے کی سزا کا حکم سنایا جبکہ دو ملزمان ابوالحسن اور یاسین کو بری کردیا۔

عمر قید

مزید : ملتان صفحہ آخر