پہلا ویمن لیڈرز ایوارڈ،11خواتین، ایک مرد کو بھی نوازا گیا

    پہلا ویمن لیڈرز ایوارڈ،11خواتین، ایک مرد کو بھی نوازا گیا

  



کراچی(این این آئی)ویمن لیڈرز ایوارڈکے پہلے ایڈیشن میں 11 پاکستانی اور غیر ملکی خواتین جبکہ ایک مرد کو سیاسی، معاشی، صحت عامہ، ایڈونچراسپورٹس، انسانی حقوق، صحافت اورحقوق نسواں جیسے شعبوں میں کارہائے نمایاں انجام دینے پر ایوارڈ سے نو ازا گیا۔گورنر ہاؤس کراچی میں منعقدہ تقریب صدر ڈاکٹر عارف علوی نے بطور مہمان خصوصی جبکہ امریکی سفیر پال ڈبیلو جونز، مختلف قونصل جنرلز، گورنر سندھ عمران اسماعیل اور دیگر نے بھی شرکت کی۔اس موقع پر امریکی سفیر پال ڈبیلو جونز نے خطاب کرتے ہوئے کہا امریکہ ہمیشہ مرد اور عورت یکساں مواقعے فراہم کرنے کی کوشش کرتا ہے،بااعتماد خواتین کسی بھی ملک کی معاشی اور سماجی ترقی میں اہم کردار ادا کرتی ہے۔صدر ڈاکٹر عارف علوی نے کہا ہمارے عظیم لیڈر قائداعظم نے کہا تھا کہ کوئی بھی قوم اس وقت تک ترقی نہیں کر سکتی جب تک اس قوم کی عورتیں مردوں کے شانہ بشانہ مل کر اس کی ترقی میں اپنا کردار ادا نہ کریں۔ 80کی دہائی میں ہمارے میڈیکل اور انجنئیرنگ کالجز میں خواتین کا کوٹہ ایک چوتھائی تھا جو سپریم کورٹ کے احکامات کے بعد آج تقریبا اسی فیصد ہے لیکن بدقسمتی سے یہ تناسب ہمیں اداروں میں نظر نہیں آتا۔اس موقع پر اس موقع پر پاکستان کی پہلی خاتون کوہ پیما ثمینہ بیگ، ہزارہ کمیونٹی کی پہلی خاتون وکیل جلیلہ حیدر، بیرسٹر خدیجہ صدیقی، ایرانی فلم ہدایت کار نرجس ابیار،ڈاکٹر فوزیہ سعید، اداکارہ بشری انصاری، آئیر لینڈ کی پہلی خاتون صدر میری رابنسن،ڈاکٹر سیمی جمالی، عمر آفتاب،صحافی زبیدہ مصطفی، ڈاکٹر شمشاد اختر اورڈاکٹر ملیحہ لودھی کو ان کی ملک و ملت کیلئے گراں قدر خدمات پر ایوارڈ سے نوازا گیا۔

ویمن لیڈرز ایوارڈ

مزید : علاقائی