”ڈی پورٹ مت کریں، مجھے کورونا وائرس ہو سکتا ہے“ کینیڈا میں پکڑے گئے چینی شہری کی دہائیاں لیکن کیا واپس بھیجا جائے گا یا نہیں؟ خبر آ گئی

”ڈی پورٹ مت کریں، مجھے کورونا وائرس ہو سکتا ہے“ کینیڈا میں پکڑے گئے چینی ...
”ڈی پورٹ مت کریں، مجھے کورونا وائرس ہو سکتا ہے“ کینیڈا میں پکڑے گئے چینی شہری کی دہائیاں لیکن کیا واپس بھیجا جائے گا یا نہیں؟ خبر آ گئی

  



اوٹاوا(مانیٹرنگ ڈیسک) کینیڈا میں غیرقانونی طور پر مقیم ایک چینی شہری کو گزشتہ دنوں ڈی پورٹ کیا جانے لگا تو اس نے عدالت سے رجوع کر لیا اور کورونا وائرس کا جواز بنا کر ملک بدر نہ کرنے کی درخواست کر ڈالی۔ گلف نیوز کے مطابق چینی شہری نے استدعا کی کہ چین میں کورونا وائرس پھیلا ہوا ہے، چنانچہ اسے کینیڈا سے ملک بدر نہ کیا جائے، ورنہ وہ بھی کورونا وائرس کا شکار ہو سکتا ہے۔

رپورٹ کے مطابق عدالت نے اس کا یہ جواز رد کر دیا اور اس کے خلاف فیصلہ دے دیا۔ 36سالہ روئی پنگ کاﺅ نامی یہ شخص 2004ءمیں کینیڈا گیا تھا اور پناہ کی درخواست دی تھی جو مسترد ہو گئی اور اب اسے ملک بدر کیا جانا تھا جس پر اس نے کورونا وائرس کا نیا جواز تراش کر عدالت سے رجوع کر لیا۔ رپورٹ کے مطابق کینیڈین حکومت نے چین کے صوبے ہیوبی کے لوگوں کو ڈی پورٹ کرنا فی الحال روک رکھا ہے کیونکہ یہ صوبہ سب سے زیادہ کورونا وائرس کی زد میں ہے۔ روئی پنگ کا تعلق گوانگ ڈونگ صوبے سے تھا جہاں وائرس ابھی زیادہ نہیں پھیلا۔ چنانچہ عدالت نے اسے واپس بھیجے کا فیصلہ سنا دیا۔

مزید : بین الاقوامی