فرانس مسلمانوں کوگھیر نے والے طرزعمل سے گریز کرے:صدرمملکت

  فرانس مسلمانوں کوگھیر نے والے طرزعمل سے گریز کرے:صدرمملکت

  

اسلام آباد (آئی این پی)صدرمملکت ڈاکٹرعارف علوی نے کہاہے کہ فرانس کی حکومت انتشاراورتعصب کی بجائے عوام کومتحد رکھنے والے اقدامات کر ے کیونکہ ایسا نہ کرنے سے جونقصان ہوگا وہ برسوں پرمحیط ہوگا، فرانس کی حکومت مسلمانوں کوگھیرے میں لینے والے طرزعمل اورقوانین سے گریز کرے، آزادی اظہاررائے کی آڑ میں مقدس شخصیات کی توہین کے سدباب کیلئے جامع بین الاقوامی اقدامات اورلائحہ عمل کی ضرورت ہے، ملک کی ترقی اورخوشحالی کیلئے تمام اقلیتوں سمیت ہم سب کو مل کر کام کرنا ہوگا۔ہفتہ کو ایوان صدرمیں وزارت مذہبی واقلیتی اموروبین المذاہب ہم آہنگی اورامپلی مینٹیشن مینارٹیز فورم کے زیراہتمام مذہبی آزادیوں اوراقلیتوں کے حقوق کے حوالہ سے بین الاقوامی کانفرنس کے اختتامی سیشن سے خطاب کرتے ہوئے صدرمملکت نے بین المذاہب ہم آہنگی اورپرامن بقائے باہمی کے بارے میں اسلامی تاریخ سے متعدد حوالے دئیے اورکہاکہ پیغمبراسلا م حضرت محمدﷺ اورخلفائے راشدین کے ادواربین المذاہب ہم آہنگی کے حوالہ سے مثالی ادوارکی حیثیت رکھتے ہیں۔ اسلام میں اقلیتوں کے حقوق کا مکمل احاطہ کیاگیاہے۔ پاکستان کاآئین ملک میں رہنے والی تمام اقلیتوں کے حقوق کاضامن ہے۔انہوں نے کہاکہ آئین کا آرٹیکل 20، 21، 25 اور آرٹیکل 27 اقلیتوں کے حقوق کومکمل تحفظ فراہم کررہاہے۔ اس وقت قومی اسمبلی میں اقلیتی ارکان کی تعداد10 اورسینیٹ میں 4 ہے، پاکستان میں رہنے والی اقلیتوں کوآئینی طورپرتحفظ فراہم کیاگیاہے۔ اقلیتوں کے حقوق کے تحفظ اوربین المذاہب وبین الثقافتی ہم آہنگی کیلئے ہم اپنی جدوجہد اورکوششیں جاری رکھیں گے۔

صدرمملکت

مزید :

پشاورصفحہ آخر -