بے نامی اثاثہ جات، انہار انجینئر  سمیت دیگر ملزموں کیخلاف کیس  کی سماعت26فروری تک ملتوی

بے نامی اثاثہ جات، انہار انجینئر  سمیت دیگر ملزموں کیخلاف کیس  کی ...

  

  ملتان (خصو صی  ر پو رٹر)  احتساب عدالت ملتان نے آمدن سے زائد ڈیڑھ ارب روپے کے بے نامی اثاثہ جات بنانے والے محکمہ انہار کے ایگزیکٹو انجینئر اور اسکے بیٹوں سمیت دیگر 13 ملزمان کے خلاف گواہوں (بقیہ نمبر27صفحہ6پر)

 کے بیانات قلمبند کرنے کے لیے سماعت 26 فروری تک ملتوی کرنے کا حکم دیا ہے۔ گزشتہ سماعت پر دو گواہوں کے بیانات قلمبند کیے گئے اور آئندہ سماعت پر تین مزید گواہوں کو پیش ہونے کی ہدایت کی گئی ہے۔ قبل ازیں فاضل عدالت میں نیب حکام کے مطابق محکمہ انہار ساہیوال کے ایگزیکٹو انجینئر رانا افضل نسیم انکے بیٹوں جنید افضل، عبید افضل، عمیر افضل، جاوید افضل اور دیگر ملزمان لقمان، انجم ذیشان، شمیم اعجاز، ڈاکٹر زبیر ندیم، میاں محمد خان، باسط مجید، نجیب الرحمن اور محمد ابرہیم کے خلاف ڈیڑھ ارب 7 کروڑ 9 لاکھ 781 روپے کی بے نامی جائیدادیں بنانے کا الزام ہے۔ ملزمان کے خلاف نیب ریفرنس میں عدالت نے فرد جرم عائد کردی ہے۔اب کیس میں مزید شہادتیں آئندہ سماعت پر قلمبند ہوں گی۔

ملتوی

مزید :

ملتان صفحہ آخر -