مادری زبانوں کے عالمی دن کے موقع پر مال روڈ پر ’ پنجابی پڑھاؤ میلہ‘  کا انعقاد

مادری زبانوں کے عالمی دن کے موقع پر مال روڈ پر ’ پنجابی پڑھاؤ میلہ‘  کا ...
مادری زبانوں کے عالمی دن کے موقع پر مال روڈ پر ’ پنجابی پڑھاؤ میلہ‘  کا انعقاد

  

لاہور(ڈیلی پاکستان آن لائن )مادری زبانوں کے عالمی دن کے موقع پر فیصل چوک میں پنجابی زبان سے محبت رکھنے والے افراد کی جانب سے ’پنجابی پڑھاؤ میلہ‘ کا انعقاد کیا گیا۔

اس موقع پر  موجود افراد کا کہنا تھا کہ پنجابی زبان کو پنجاب میں جلد از جلد تعلیم کی زبان بنایا جائے تاکہ ملک میں شرح خواندگی عام ہو سکے۔ پنجابی کو پنجاب بھر میں تعلیمی اور دفتری زبان بنایا جائے اور اس سے ہونے والی نا انصافی کا ازالہ کیا جائے۔ پنجابی میڈیا کو اشتہار دیئے جائیں اور اس کی حوصلہ افزائی کی جائے۔پنجابی پڑھاؤ میلہ میں پنجابی زبان کو پنجاب میں جلد از جلد تعلیم کی زبان بنائے جانے کی قراداد  منظور کرتے ہوئے مطالبہ کیا گیا ہے کہ اس زبان کو ہر صورت لاگو کیا جائے ۔ 

اس موقع پر پنجابی شاعر بابا نجمی نے پنجابی زبان  میں  کلام  سنانے کے ساتھ ساتھ گفتگو بھی کی اور پنجابی زبان کو پنجاب میں رائج کرنے کی اہمیت پر زور دیا۔پروین ملک نے کہا کہ پنجابی زبان کا کلاسیکی ادب دنیا بھر میں عدیم المثال ہے لیکن ہم نے اس عظیم ورثے کی قدر نہیں کی اور آج اسی وجہ سے انسان دوستی کا سبق بھی فراموش کر چکے ہیں۔

جلسے سے خطاب کرتے ہوئے احمد رضا پنجابی نے کہا کہ مادری زبان کے حقوق دلوانے اور اسے تعلیمی زبان منوانے کے لیے ہم نے جو جدوجہد شروع کی ہے‘ اسے انجام تک پہنچائے بغیر چین سے نہیں بیٹھیں گے۔ انہوں نے کہا کہ دنیا بھر کے مسلمہ اصول یعنی مادری زبان میں ابتدائی تعلیم کو پنجاب میں دو سو سال سے نظر انداز کیا جا رہا ہے لیکن اب ہم مزید یہ پالیسی جاری نہیں رہنے دیں گے۔

مزید :

قومی -