حلیم عادل شیخ پر جیل میں تشدد، جان کا خطرہ، ترجمان نے بڑا الزام عائد کردیا

حلیم عادل شیخ پر جیل میں تشدد، جان کا خطرہ، ترجمان نے بڑا الزام عائد کردیا
حلیم عادل شیخ پر جیل میں تشدد، جان کا خطرہ، ترجمان نے بڑا الزام عائد کردیا

  

کراچی(ڈیلی پاکستان آن لائن)پاکستان تحریک انصاف کے رہنما اور سندھ اسمبلی میں اپوزیشن لیڈر حلیم عادل شیخ کے ترجمان نے پیپلز پارٹی کی قیادت اور سندھ حکومت پر حلیم عادل شیخ کو سینٹرل جیل میں تشدد کا نشانہ بنانے کا الزام عائد کرتے ہوئے کہا ہے کہ جیل میں حلیم عادل شیخ کی زندگی کو خطرہ ہے،اگر انہیں کچھ ہوا تو پیپلز پارٹی اور سندھ حکومت اس کی ذمہ دار ہو گی ۔

تفصیلات کے مطابق حلیم عادل شیخ کے ترجمان  محمد علی بلوچ نے کہا ہے کہ سندھ اسمبلی میں اپوزیشن لیڈر  حلیم عادل شیخ کو گزشتہ روز سینٹرل جیل منتقل کیا گیا تھا ،جیل میں پیپلزپارٹی کے گینگ وار سےتعلق رکھنے والے غنڈوں نے تشدد کا نشانہ بنایا تھا،جیل انتظامیہ نےحلیم عادل شیخ کو سازش کے تحت تشدد کا نشانہ بنوایا،جیل انتظامیہ نے حلیم عادل شیخ سے کسی کی بھی ملاقات نہیں کروائی تھی۔ ترجمان  کا کہنا تھا کہ حلیم عادل شیخ کو جیل میں بند وارڈ کر دیا گیا تھا گھر سے کپڑے اور کھانہ بھی نہیں پہنچانے دیا،ابھی کچھ دیر قبل جیل انتظامیہ نے حلیم عادل شیخ کو این آئی سی وی ڈی ہسپتال منتقل کیا ہے،ورثا کو حلیم عادل شیخ کو ہسپتال منتقل کرنے کی اطلاع دی گئی ہے،حلیم عادل شیخ کی ٹانگ و دیگر حصوں پر تشدد کے نشان ہیں،پیپلزپارٹی مختلف طریقوں سے حلیم عادل شیخ کو نقصان پہنچا رہی ہے ۔

  محمد علی بلوچ نے کہا کہ سینٹرل جیل کے سپرنٹنڈنٹ بھی پیپلزپارٹی کے غنڈوں سے ملے ہوئے ہیں،جیل میں حلیم عادل شیخ کی زندگی کو خطرہ ہے، انہیں کچھ بھی ہوا اس کی ذمہ دار سندھ حکومت اور پیپلزپارٹی ہوگی۔ 

مزید :

علاقائی -سندھ -کراچی -