حکمران طالبان کے ساتھ معذرت خوانہ رویہ ترک کریں،اشرف جلالی

حکمران طالبان کے ساتھ معذرت خوانہ رویہ ترک کریں،اشرف جلالی

لاہور(سٹاف رپورٹر)سربراہ ادارہ صراط مستقیم ڈاکٹر محمد اشرف آصف جلالی نے بنوں میں سیکیورٹی فورسز کے قافلے پر دھماکے اور نیو کینٹ راولپنڈی میں ہونے والے خود کش حملہ کی شدید مذمت کرتے ہوئے کہاہے کہ ملک جل رہا ہے اور طالبان سے مذاکرات کے حامیمذاکیات میں پڑے ہوئے ہیں بارود کی بُو میں گفتگو کا کوئی فائدہ نہیں یہی لوگ کل کہتے تھے ملک میں قتل وغارت کی کارروائیاں خفیہ ہاتھ کررہاہے جس سے طالبان کا کوئی تعلق نہیں اَب کہہ رہے ہیں طالبان سے مذاکرات سے تاخیر کی وجہ سے دھماکے ہو رہے ہیں کیا سیکورٹی فورسز اور بے گناہ مسلمان کا خون اتنا سستا ہے کہ اسے مذاکرات کے پیغام کی سیاہی بنایا جائے عمران خان اور مذاکرات کے حامی چند علماءکو ملک سے دہشت گردی ختم کرنے میں کوئی کامیابی حاصل نہیں ہوسکی مگر انہیں دہشت گردوں کی پہیلیوں کا جواب آگیا ہے جس کی وجہ سے دہشت گردی کی واردات ہوتے ہی وہ دہشت گردوں کا پیغام سمجھ جاتے ہیں اورحکمران مذاکرات کی ڈُگڈگی بجانے والے کسی جوگی کی کہانی سنانے کی بجائے حکمرانی کا حق ادا کریں طالبان سے معذرت خواہانہ رویّہ ترک کرکے قوم کی اُمنگوں کے ترجمان بنیں اور ملک سے مکمل طو رپر دہشت گردی کا خاتمہ کریں حکمران دہشت گردوں کے اندرونی اور بیرونی فنڈنگ اور اخلاقی مدد فراہم کرنے والوں کے منہ بند کرکے عوام کے زخموں پر مرہم رکھیں اور اپنی صفوں سے کا لی بھیڑوں اور ملک دشمن عناصر کے ایجنٹوں کونکال باہر کریں۔

مزید : میٹروپولیٹن 1


loading...