سینٹ کمیٹی چوہدری نثار اور سیکرٹری داخلہ کی اجلاس میں عدم شرکت پربرہم

سینٹ کمیٹی چوہدری نثار اور سیکرٹری داخلہ کی اجلاس میں عدم شرکت پربرہم

اسلام آباد(اے این این) سینٹ کی قائمہ کمیٹی برائے داخلہ نے وزیر داخلہ چوہدری نثار اور سیکرٹری داخلہ شاہد خان کی اجلاس میں عدم شرکت پر شدید برہمی کا اظہار کرتے ہوئے کہاہے کہ وزیر داخلہ کمیٹی سے اسی طرح مفرور ہیں جس طرح سینٹ سے مفرور ہیں، چوہدری نثار کے رویے کے خلاف کمیٹی ارکان نے اجلاس سے علامتی واک آﺅٹ کیا جبکہ آئی جی پولیس اسلام آباد نے کمیٹی کو بتایا ہے کہ غازی فورس کے 198 کارکنوں کا سراغ لگایا گیا ہے، اغواء برائے تاوان کی روک تھام کیلئے قانون موجود نہیں، اسلام آباد کے 900سرکاری و پرائیویٹ سکولوں میں سیکورٹی سسٹم نصب کردیا گیا ہے، اسلام آباد کا رہائشی نوجوان ڈرون حملے میں مارا گیا ہے۔ منگل کو سینٹ کی قائمہ کمیٹی برائے داخلہ کا اجلاس سینیٹر طلحہ محمود کی زیر صدارت ہوا۔ اجلاس میں وزارت داخلہ کے ایڈیشنل سیکرٹری، چیف کمشنر اسلام آباد ، آئی جی اسلام آباد سمیت سی ڈی اے کے افسروں نے شرکت کی۔ کمیٹی ارکان نے وزیر داخلہ اور سیکرٹری داخلہ کی اجلاس میں عدم شرکت پر شدید برہمی کا اظہار کیا اور کہا کہ پارلیمنٹ سے زیادہ اہم کوئی فورم نہیں، سیکرٹری اور وزیر دونوں کمیٹی کو اہمیت نہیں دیتے ، وزیر داخلہ کمیٹی سے اسی طرح مفرور ہیں جس طرح سینٹ سے مفرور ہیں۔ کمیٹی ارکان نے وزیرداخلہ کے رویے پر اجلاس سے علامتی واک آﺅٹ کیا۔ اسلام آباد کی سیکورٹی صورتحال پر کمیٹی کو بریفنگ دیتے ہوئے آئی جی اسلام آباد نے بتایا کہ اسلام آباد کے سکولوں کا سیکورٹی آڈٹ مکمل کرلیا گیا ہے۔900 پرائیویٹ و سرکاری سکولوں میں سیکورٹی سسٹم نصب کردیا گیا ہے، ہر سکول میں سیکورٹی کوارڈینیٹر مقرر کیا گیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ 3ہزار افراد پر مشتمل سیکورٹی اینڈ ویجیلنس کمیٹیاں قائم کی گئیں ہیں اور99 بیٹس بنائی گئیں ہیں یہ کمیٹیاں اپنے گلی محلوں کی نگرانی کریں گی۔ انہوں نے کہا کہ گزشتہ تین سالوں کے دوران اسلام آباد سے 247 افراد کو اغواءکیا گیا، اغواءبرائے تاوان کی روک تھام کیلئے قانون موجود نہیں ۔ انہوں نے کہا کہ سیکٹر جی سیون کے رہائشی ایک نوجوان کو ورغلا کر افغانستان لے جایا گیا جہاں اسے جہاد کی ٹریننگ دی گئی اور بعدازاں یہ نوجوان ڈرون حملے میں مارا گیا۔ انہوں نے کہاکہ اسلام آباد کے بیچلر ہوسٹلز کا سروے بھی مکمل کرلیا گیا ہے۔ اسلام آباد میں غازی فورس کے 198 سرگرم کارکنوں کی نشاندہی کی گئی ہے اور51 کارکنوں کے گھروں کے پتے معلوم کرلئے گئے ہیں۔65 کے پتے معلوم نہیں ہوسکے ،56 کو چیک کرلیا گیا ہے جبکہ53 سے پرفارمہ لیا گیا ہے جس پر ان کے کوائف سمیت تمام تفصیلات موجود ہیں۔

عدم شرکت پربرہم

مزید : صفحہ آخر


loading...