6 سالہ بچے کے اغواء ، قتل کے مقدمہ میں گرفتار2 ملزم بیگناہ قرار پانے پر بری

6 سالہ بچے کے اغواء ، قتل کے مقدمہ میں گرفتار2 ملزم بیگناہ قرار پانے پر بری

 لاہور( نامہ نگار )انسداد دہشت گردی کی عدالت نے 6 سالہ بچہ کو اغواء کے بعد قتل کرنے کے مقدمہ میں گرفتار دو ملزمان قاری ثاقب اور وقار کو پولیس تفتیش میں بے گناہ قرار دیئے جانے پر بری کر دیا ۔سی آئی اے نواں کوٹ پولیس نے عدالت میں مقدمہ کا چالان پیش کرتے ہوئے عدالت کو بتایا کہ تفتیش کے دوران قاری ثاقب اوروقار بے گناہ ثابت ہوئے ہیں۔ پولیس کی طرف سے دو ملزمان کو مقدمہ سے ڈسچارج رپورٹ پیش کرنے پر عدالت نے دونوں ملزمان کو رہا کرنے کا حکم دے یا جبکہ پولیس نے مقدمہ کے تیسرے ملزم سدھیر کو عدالت کے روبرو پیش کیا اور عدالت کو بتایا کہ ملزم سدھیر کے ڈی این اے ٹیسٹ میں ملزم کی شناخت ہو ئی ہے جبکہ ملزم سدھیر نے دوران تفتیش اعتراف جرم بھی کیا ہے لہذا استدعا ہے کہ ملزم سے مزید تفتیش کرنے کے لئے چھ روز کا جسمانی ریمانڈ دیا جائے جس پر عدالت نے ملزم کو چھ روزہ جسمانی ریمانڈ پر پولیس کے حوالے کر دیا ۔یاد رہے کہ 3 جنوری کو 6 سالہ بچے معین یا سین کو گرین ٹاؤن کے علاقے سے اغواء کرنے کے بعد اسے بداخلاقی کا نشانہ بنانے کے بعد قتل کر دیا گیا تھا جس کی لاش گرین ٹاؤن کی ایک مقامی مسجد سے بر آمد ہوئی تھی جس پر پولیس نے ملزمان کے خلاف مقدمہ درج کررکھا ہے۔

مزید : علاقائی


loading...