لڑکیوں کو سود کے چنگل میں پھانس کر بچے بیچنے والا گروہ بے نقاب

لڑکیوں کو سود کے چنگل میں پھانس کر بچے بیچنے والا گروہ بے نقاب
لڑکیوں کو سود کے چنگل میں پھانس کر بچے بیچنے والا گروہ بے نقاب

  


لاہور (ویب ڈیسک) صوبائی دارالحکومت میں بے بس اور مجبور لڑکیوں کو سود کے چنگل میں پھنسا کر ان کے بچے بھاری رقوم کے عوض فروخت کرنے والے مبینہ گروہ کا انکشاف ہوا ہے۔ پولیس کے مطابق اس گروہ کے ارکان بھولی بھالی لڑکیوں کی نازیبا تصاویر بنا کر انہیں غلط روابط پر مجبور کردیتے تھے۔ اس گروہ کا انکشاف اس وقت ہوا جب اس کا شکار ہونے والی ایک لڑکی ایس پی ماڈل ٹاﺅن آپریشن کے دفتر پہنچ گئی اور اس نے اپنی دلدوز داستان بیان کرتے ہوئے اس بات کا اظہار بھی کیا کہ اس کے علاوہ بہت سی لڑکیاں مبینہ طور پر اس گروہ کا شکار ہوچکی ہیں۔ اس نے یہ شرمناک پہلو بھی بتایا کہ گروہ کے ارکان لڑکیوں سے نہ تو نکاح یا شادی کرتے ہیں اور اس گروہ کا شکار غریب لڑکیاں ہی ہوئی ہیں۔

پاکستان میں کفن اور تابوتوں کا کاروبار عروج پر پہنچ گیا

ایس پی ماڈل ٹاﺅن کے حکم پر نشتر ٹاﺅن پولیس نے ملزمان کے خلاف لڑکی کو بے آبرو کرنے، قتل کی دھمکیاں دینے اور بچے کو فروخت کرنے کے الزامات کے تحت مقدمہ درج کرلیا۔ پولیس کے مطابق اگرچہ لڑکی نے بہت سے شواہد پیش کئے ہیں تاہم حتمی بات تصدیق کے بعد ہی کہی جاسکتی ہے۔ مقامی اخبار جنگ کے مطابق گزشتہ روز ایس پی ماڈل ٹاﺅن آپریشن سید باقر شاہ کے دفتر میں ایک لڑکی جس نے اپنا نام سونیا پترس بتایا نے پیش ہوکر کہا کہ وہ ایک ایسے گروہ کا شکار ہوئی ہے جس نے اسے ورغلا کر بغیر شادی کئے بچہ پیدا کیااور ایک دن کے بچے کو کسی بے اولاد امیر جوڑے کو بھاری رقم کے عوض فروخت کردیا۔

 وہ مختلف گھروں میں جاکر کام کرتی تھی اوراسی دوران اس کے ایک رشتے دار ساجن نے اس سے رابطہ کیا اور اپنی والدہ کیلئے گھر بلاتا رہا اور وہ اس کے گھر جاکر کام کرتی رہی، سونیا نے بتایا کہ چھوٹی بہن بیمار ہوئی تو ہمیں کچھ پیسوں کی جرور پڑی جو ساجن نے ہمیں سود پر دئیے اور ہر ماہ 20 ہزار کی رقم کے بدلے ان سے 6 ہزار روپے سود اکٹھا کرتا رہا اور قم واپس نہ کرسکنے پر اس نے مجھے خطرناک نتائج کی دھمکیاں دینا شروع کردیں۔

اسی دوران میں ایک دن اس کے گھر منت سماجت کرنے گئی تو اس نے اور اس کی والدہ نے مجھے نشہ آور مشروب پلا دیا جس پر وہ بے ہوش ہوگئی تو ساجن نے اس کی نازیبا فلم بنالی اور اسے دھمکی دی کہ اگر میں نے اس کی بات نہ مانی تو وہ یہ فلم اس کے رشتے داروں کو دیدے گا اور میں کسی کو منہ دکھانے کے قابل نہیں رہوں گی جس پر میں ڈرگئی۔

لڑکی نے مزید بتایا کہ ملزموں کے 4 سے زیادہ اور ساتھی ہیں اور وہ اکثر اس کے سامنے اس بات کا اظہار کرتے رہے کہ ہم سونیا جیسی دیگر لڑکیوں کو جس قدر بلیک میل کریں گے ا تنا ہی زیادہ بچے ان کے پاس ہوں گے اور وہ بے اولاد جوڑوں کو پہلے کی طرح فروخت کریں گے۔ سونیا نے بتایا جب اس کا بچہ پیدا ہوا تو ملزموں نے اسے کسی امیر گھرانے کو فروخت کردیا۔ لڑکی کے مطابق ساجن کی والدہ عقیلہ عرف مالا اس گینگ کی سرغنہ ہے اور مجبور لڑکیوں کو وہی اپنے چنگل میں پھنساتی ہے پھر انہیں بلیک میل کرکے ان کی زندگی تباہ کرتی ہے۔ اس نے مزید بتایا کہ ملزمان نے کئی لڑکیوں کی زندگی تباہ کردی ہے اور اب بھی کئی مجبور لڑکیاں ان کے چنگل میں پھنسی ہوئی ہیں۔ اس سلسلہ میں رابطہ کرنے پر ایس پی آپریشن ماڈل ٹاﺅن ڈویژن سید باقر شاہ نے کہا مقدمہ درج ہوچکا ہے اور ملزموں کی گرفتاری کیلئے چھاپے مارے جارہے ہیں۔

مزید : جرم و انصاف


loading...