مدارس عربیہ کے زیر اہتمام کل ملک بھر میں سانحہ چار سدہ کے خلاف اجتماعات ہونگے

مدارس عربیہ کے زیر اہتمام کل ملک بھر میں سانحہ چار سدہ کے خلاف اجتماعات ہونگے

لاہور(نمائندہ خصوصی) ملک بھر میں کل مدارس عربیہ کے اساتذہ،طلباء ،آئمہ اور خطباء سانحہ چارسدہ کیخلاف اجتماعات منعقد کریں گے۔اجتماعات میں شہداء اور ان کے لواحقین کے ساتھ اظہار یکجہتی کیا جائے گا دہشتگردی اور انتہا پسندی کی مذمت کی جائے گی اور دہشتگردوں کا فکری ونظریاتی طور پرمقابلہ کرنے کا عزم کیا جائے گا۔ علماء ،طلباء اور مشائخ بے گناہ انسانیت کا قتل عام کرنے والوں کیخلاف میدان میں نکلیں۔چارسدہ بم حملہ کسی تعلیمی ادارے پر نہیں بلکہ پاکستان پر حملہ ہے۔چارسدہ میں ہونے والی سفاکیت اور بربریت کا اسلام سے کوئی تعلق نہیں دہشتگردی کے ناسور سے نجات اور امن وامان کے قیام کیلئے پوری قوم حکومت اور مسلح افواج کے ساتھ کھڑی ہے۔ یہ بات پاکستان علماء کونسل کے مرکزی چیئرمین اور وفاق المساجد پاکستان کے صدر حافظ محمد طاہر محمود اشرفی نے جامعہ اسلامیہ انوار العلوم کراچی میں علماء کنونشن سے خطاب کرتے ہوئے کہی۔ اس موقع پرمرکزی سیکرٹری جنرل صاحبزادہ زاہد محمود قاسمی،مولانا قاری اللہ داد،پاکستان علماء کونسل سندھ کے کنوینئر مولانا اسعد زکریا ،مفتی حبیب الرحمن،قاری محمد اعظم فاروقی،مولانا سعد اللہ شفیق،مولانا حماد اللہ ودیگر نے بھی خطاب کیا۔ حافظ محمد طاہر محمود اشرفی نے چارسدہ یونیورسٹی پر حملے کی شدید مذمت کرتے ہوئے چارسدہ یونیورسٹی پر حملے کوسفاکانہ،وحشیانہ اورغیر اسلامی فعل قرار دیتے ہوئے کہا ہے کہ معصوم انسانیت کا قتل کرنے والوں کا کوئی مذہب نہیں ہوتا ۔

مزید : میٹروپولیٹن 1