رنگ روڈسدرن لوپ منصوبے کے تحت بحریہ ٹاؤن میں رنگ روڈ بنانے کے خلاف حکم امتناعی جاری

رنگ روڈسدرن لوپ منصوبے کے تحت بحریہ ٹاؤن میں رنگ روڈ بنانے کے خلاف حکم ...

لاہور(نامہ نگار خصوصی )لاہورہائیکورٹ نے رنگ روڈسدرن لوپ منصوبے کے تحت بحریہ ٹاؤن میں رنگ روڈ بنانے کے خلاف حکم امتناعی جاری کر تے ہوئے تاحکم ثانی عمل درآمدروک دیاہے۔ تین رکنی بنچ نے منصوبوں کے لئے زمین ایکوائرکرنے کیخلاف دائرتمام درخواستیں یکجاکرکے 25 جنوری کولگانے کاحکم دے دیا۔مسٹر جسٹس سید منصورعلی شاہ کی سربراہی میں قائم جسٹس شاہدکریم اورجسٹس شمس محمودمرزاپر مشتمل تین رکنی فل بنچ نے بحریہ ٹاؤن کی جانب سے دائردرخواست پر سماعت کی۔ درخواست گزارکے وکلاء نے موقف اختیارکیاکہ مالک کی مرضی کیبغیراراضی کو زبردستی ایکوائرنہیں کیاجاسکتا۔لینڈایکوزیشن ایکٹ آئین کے آرٹیکل 9،10( اے)، 14، 23 اور24سے متصادم ہے۔ وکلاء نے کہاکہ اس وقت حکومت سدرن لوپ تھری منصوبے کے لئے بحریہ ٹاؤن مالکان کی مرضی کے بغیروہاں رِنگ روڈبناناچاہتی ہے۔رِنگ روڈکے لئے متبادل جگہ ہڈیارہ ڈرین بھی ہے، جہاں لاگت بھی کم آئے گی ۔ انہوں نے استدعاکی کہ مالکان کی مرضی کے بغیررِنگ روڈبنانے کے اقدام کوغیرآئینی قرار دیا جائے۔ تین رکنی فل بنچ نے ابتدائی دلائل سننے کے بعد حکم امتناعی جاری کرتے ہوئے بحریہ ٹاؤن رنگ روڈ منصوبے پرتاحکم ثانی عملدرآمد روک دیا۔

مزید : صفحہ آخر