اورنج لائن ٹرین منصوبہ پاک چائنہ کوریڈور کا حصہ ہے ،ہائی کورٹ میں سرکاری وکیل کا انکشاف

اورنج لائن ٹرین منصوبہ پاک چائنہ کوریڈور کا حصہ ہے ،ہائی کورٹ میں سرکاری ...
اورنج لائن ٹرین منصوبہ پاک چائنہ کوریڈور کا حصہ ہے ،ہائی کورٹ میں سرکاری وکیل کا انکشاف

  


لاہور(نامہ نگارخصوصی) لاہور ہائی کورٹ میں پنجاب حکومت کے وکیل نے اورنج لائن ٹرین پراجیکٹ کو پاک چائنہ کوریڈور منصوبے کا حصہ قرار دے دیا جس پرجسٹس عابد عزیز شیخ اور جسٹس شاہد کریم پر مشتمل ڈویژن بنچ نے پنجاب حکومت کو تحریری جواب داخل کرنے اور منصوبے سے متعلق دستاویزات ریکارڈ پر لانے کے لئے 25جنوری تک مہلت دے دی ۔کامل خان سمیت سول سوسائٹی کی اورنج ٹرین مکمل منصوبے کے خلاف درخواستوں پر سماعت شروع ہوئی تو پنجاب حکومت کی طرف سے خواجہ حارث احمدایڈووکیٹ نے پیش ہو کر دلائل دیئے اور انکشاف کیا کہ اورنج لائن ٹرین منصوبہ پاک چائنہ کوریڈور کا حصہ ہے، اورنج ٹرین منصوبے کی دستاویزات حساس ہیں جنہیں عدالت میں پیش کرانے کے لئے چینی حکام کی مشاورت اور اجازت ضروری ہے لہٰذا حکومت کو مزید وقت دیا جائے، سول سوسائٹی کی طرف سے اظہر صدیق ایڈووکیٹ نے موقف اختیار کہ اورنج ٹرین منصوبے کوپاک چائنہ کوریڈور منصوبے کا حصہ قرار نہیں دیا جا سکتا، حکومت اورنج ٹرین منصوبے کی آڑ میں شہر کا تاریخی ورثہ تباہ کر رہی ہے، منصوبے کو غیر آئینی قرار دیا جائے، فاضل بنچ نے دلائل سننے کے بعد حکومتی وکیل کی استدعا منظور کرتے ہوئے مزید سماعت 25جنوری تک ملتوی کردی.۔

مزید : لاہور