نواز شریف نے سرکاری عہدے کو ذاتی حیثیت کیلئے استعمال کیا: سراج الحق

نواز شریف نے سرکاری عہدے کو ذاتی حیثیت کیلئے استعمال کیا: سراج الحق

اسلام آباد (آن لائن) امیر جماعت اسلامی سراج الحق نے کہا ہے کہ جب ایک لیڈر پھسلتا ہے تو پوری قوم پھسل جاتی ہے وزیراعظم نواز شریف نے سرکاری حیثیت کو ذاتی حیثیت کے لئے استعمال کیا ہے ۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے سپریم کورٹ کے باہر پانامہ لیکس کی سماعت کے بعد میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کیا امیر جماعت اسلامی سراج الحق نے کہا کہ پانامہ کیس کرپشن کا ہے کسی کی ذاتیات کا نہیں جن عالمی رہنماؤں کے نام پانامہ میں آئے انہوں نے شوائد پیش کئے اور استعفے بھی دیئے لیکن پاکستان میں چھوٹے اور غریب آدمی کو غلطی کرنے پر سزا ملتی ہے بڑے آدمی جب غلطی کرتے ہیں یا کرپشن تو کہتے ہیں ہمیں استثنیٰ حاصل ہے جب کسی بڑے کو سزا ہوگی تو قانون پر عملدرآری تب ہی ہوگی اور ہماری درخواست کسی فرد کیخلاف نہیں بلکہ کرپشن کیخلاف ہے اور یہ جنگ تب تک جاری رہے گی جب تک کرپشن میں ملوث حکمرانوں کا احتساب نہیں ہوجاتا انہوں نے کہا کہ وزیراعظم نواز شریف نے سرکاری حیثیت کو ذاتی حیثیت کیلئے استعمال کیا ہے اور پارلیمنٹ میں غلط بیانی کی ہے اس لئے وہ صادق اور امین نہیں رہے اور قانونی طور پر وزیراعظم ر ہنے کا کوئی جواز ان کے پاس نہیں اگر آرٹیکل 62/63 پر عملدرآمد نہ کیا گیا تو قیامت تک اس قوم کو دیانتدار لیڈر نہیں ملے گا عوام کے پاس غربت کے سوا کچھ نہیں ہے اور حکمران عیش و آرام کی زندگی گزار رہے ہیں انہوں نے مزید کہا کہ ہمارا کیس جھوٹ کیخلاف اور سچ کی تلاش میں ہے اور ہم عدالت عظمیٰ سے پرامید ہیں کہ اپنا وکیل تبدیل نہیں کررہا اپنے وکیل پر بھرپور اعتماد ہے اور امید ہے کہ سپریم کورٹ اس کیس کا فیصلہ عوام کی امنگوں اور خواہش کے مطابق دے گی اور جلد از جلد اس کیس کا فیصلہ سنائیں گے ۔

مزید : صفحہ آخر