امریکہ کے صدر ڈونلڈ ٹرمپ کے خلاف دنیا بھر میں مظاہرے ، نیویارک سے لے کر سیاٹل تک خواتین سراپا احتجاج

امریکہ کے صدر ڈونلڈ ٹرمپ کے خلاف دنیا بھر میں مظاہرے ، نیویارک سے لے کر سیاٹل ...
امریکہ کے صدر ڈونلڈ ٹرمپ کے خلاف دنیا بھر میں مظاہرے ، نیویارک سے لے کر سیاٹل تک خواتین سراپا احتجاج

  

واشنگٹن(ڈیلی پاکستان آن لائن)امریکہ کے صدر ڈونلڈ ٹرمپ کے خلاف دنیا بھر میں مظاہرے کیے گئے ہیں،ان مظاہرین میں زیادہ تعداد خواتین کی ہے۔

برطانوی خبر رساں ادارے کے مطابق واشنگٹن میں خواتین مارچ کے نام سے ریلی نکالی جا رہی ہے،یہ ریلی دنیا بھر میں ان 600 ریلیوں میں سے ایک ہے جو ڈونلڈ ٹرمپ کے عہدہ صدارت پر فائز ہونے کے پہلے دن نکالی گئی ہے۔

ان ریلیوں کا مقصد خواتین کے حقوق کو اجاگر کرنا ہے جن کے بارے میں مظاہرین کو خدشہ ہے کہ نئی انتظامیہ کے زیراثر ان حقوق کو خطرہ لاحق ہے،ان ریلیوں میں معروف فنکاروں کی بھی شرکت متوقع ہے جن میں کیٹی پیری، سکارلٹ جوہانسن، ایمی شمر، اممریکہ فیریرا، پیٹریشیا آرکوئیٹ اور مائیکل مور شامل ہیں۔

امریکہ میں نیویارک سے لے کر سیاٹل تک تقریبا 300 شہروں میں ایسے مظاہرے ہوئے ہیں،ٹرمپ مخالف مظاہرے آسٹریلیا، نیوزی لینڈ اور بنکاک سمیت ایشیائی اور یورپی شہروں میں بھی منعقد کیے گئے۔

ورلڈ اکنامک فورم،نوازشریف اور راحیل شریف کے درمیان ایک ہی ہوٹل میں ٹھہرنے کے باوجود ملاقات نہ ہو پائی

واضح رہے جمعے کو واشنگٹن میں ہونے والے مظاہروں میں مظاہرین نے کچھ دکانوں کے شیشے توڑ دیے تھے اور سرمایہ داری نظام اور نئے صدر کے خلاف جذبات کا اظہار کیا تھا،ان مظاہروں میں پولیس کی جانب سے 200 سے زائد افراد کو گرفتار کیا گیا جبکہ چھ پولیس اہلکار زخمی ہوئے تھے،ڈونلڈ ٹرمپ نے امریکی صدر کی حیثیت سے پہلا قدم اٹھاتے ہوئے سابق صدر کی جانب سے ہیلتھ کیئر کے سلسلے میں کی جانے والی اصلاحات کو ایگزیکٹو آرڈر پر دستخط کرکے نشانہ بنایا ہے۔

مزید : بین الاقوامی /اہم خبریں