آزادعدلیہ اورنیب سے کرپشن پرکاری ضرب لگادی ،میاں اویس

آزادعدلیہ اورنیب سے کرپشن پرکاری ضرب لگادی ،میاں اویس

لاہور(پ ر)انٹرنیشنل ہیومن رائٹس موومنٹ ڈسٹرکٹ قصور کے صدرمیاں اویس علی نے کہا ہے کہ آزادعدلیہ اورنیب سے کرپشن پرکاری ضرب لگادی ۔بدعنوان عناصراوران کے حامیوں کواس باردنیا کی کوئی طاقت احتساب کاراستہ نہیں روک سکتی

۔آج پاکستان کا بااثر قبضہ مافیا بھی آزادعدلیہ سے معافی مانگ رہا ہے ۔پاکستان کے عوام عدالت عظمیٰ کے چیف جسٹس میاں ثاقب نثار کونجات دہندہ کے طورپریادرکھیں گے اوران کی ریٹائرمنٹ کے بعد بھی ان کانام عزت سے لیاجائے گا۔چیف جسٹس آف پاکستان مادروطن کے محروم ومظلوم طبقات کیلئے طاقت اورامید ہیں۔وہ ایک اجلاس سے خطاب کررہے تھے ۔ میاں اویس علی نے مزید کہا کہ کرپشن کاکینسرہماری ریاست کی رگ رگ میں سرائیت کرگیاہے ،یہ مہلک مرض ختم کرنے کیلئے ہومیو پیتھک طریقہ درست نہیں بلکہ آپریشن کرناہوگا ۔متعدد ملکوں کی طرح پاکستان میں بھی بدعنوان عناصرکی سرکوبی کیلئے سزائے موت کاقانون بنایاجائے۔انہوں نے کہا کہ بدعنوانی کاباب بند ہونے تک پاکستان معاشی طورپرٹیک آف نہیں کرسکتا۔تبدیلی کاایک فطری اصول ہے ،یہ اوپرسے نیچے کی طرف آئی گی،احتساب سے بھی اوپرسے نیچے تک جائے گا ۔انہوں نے کہا کہ اقتدار کے ایوانوں میں بدعنوانی ختم کئے بغیر اداروں کواس کی نحوست سے پاک نہیں کیا جاسکتا۔اس ناسور سے نجات کیلئے ملک بھرمیں ایک منظم اورموثرتحریک کی ضرورت ہے ۔انہوں نے کہا کہ نیب حکام کو اپنی پوری طاقت سے بدعنوانی کیخلاف مزاحمت کرناہوگی ۔پاکستان میں وسائل کی کمی نہیں مگرریاستی ترجیحات درست کرنے کی ضرورت ہے۔اس فرسودہ نظام میں عوام تک ثمرات پہنچنامحال ہے ۔انہوں نے کہا کہ حکمرانوں کے بلندبانگ اعلانات اوربسنت سے عوام کی محرومیاں دورنہیں ہوں گی ،عوام کامعیارزندگی بلندکرنے کیلئے دوررس اصلاحات ناگزیر ہیں۔ماضی کے حکمرانوں نے قومی خزانہ بھرنے کادعویٰ کیا تھا مگر بیچارے عوام کے پیٹ توآج بھی خالی ہیں ۔انہوں نے کہا کہ غربت کی لکیر سے نیچے زندگی گزارنے والے پاکستانیوں کی تعداد بڑھ گئی ہے ،ریاست ان کی بحالی کے ٹھوس اقدامات اٹھائے ۔ عوام کوان کے بنیادی حقوق کی فراہمی یقینی بنائے بغیران سے فرض کی بجاآوری کی امید رکھنا درست نہیں۔

مزید : میٹروپولیٹن 4