امریکی صدر کی شٹ ڈاؤن خاتمے کیلئے پیشکش اپوزیشن نے مسترد کردی ،ٹرمپ انسانی جانوں کے مسئلے کے حل کیلئے سنجیدہ نہیں ،نینسی پیلوسی

امریکی صدر کی شٹ ڈاؤن خاتمے کیلئے پیشکش اپوزیشن نے مسترد کردی ،ٹرمپ انسانی ...

واشنگٹن(اظہر زمان، خصوصی رپورٹ) صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے میکسیکو سرحد پر دیوار کی تعمیر کیلئے فنڈ کی فراہمی کو اپنے لئے اتنا اہم بنالیا ہے کہ وہ اس کیلئے حکومت کے جزوی شٹ ڈاؤن کو برداشت کررہے ہیں جس کی مدت پہلے تیس دن جری رہ کر ریکارڈ توڑ چکی ہے اب اپنے تازہ بیانات میں انہوں نے اس کے بدلے میں ان لاکھوں غیر قانونی تارکین وطن کو شہریت کی راہ پر ڈالنے کیلئے تیار ہوگئے ہیں جن کو وہ قبل ا ز یں ملک سے باہر دھکیلنے کا اعلان کرتے رہے ہیں ،اس سے پہلے انہوں نے ایک اچھا تاثر دینے کیلئے ان غیر قانونی بچوں کے امریکہ میں عا ر ضی قیام کے قانون ڈاکا میں مزید تین سال کی توسیع بھی کی ،سابق صدر اوبامہ نے غیر قانونی تارکین وطن کے ان بچوں کو سہولت دینے کا یہ قانون منظور کیا تھا جن کی عمر آمد کے وقت سولہ سال سے کم تھی صدرٹرمپ بضد ہیں کہ باقی ماندہ محکموں کے ان اخراجاتی بلوں میں جو ابھی کانگریس نے منظور نہیں کئے میکسیکو کیساتھ ملنے والی جنوبی سرحد پر دیوار کی تعمیر کیلئے پانچ ارب ستر کروڑ ڈالر کا فنڈ مختص کیا جائے جبکہ کانگریس کے ڈیموکرئیک ارکان اس سرحد پر باڑ لگانے یا سکیورٹی کی صورتحال بہتر بنانے کیلئے مخصوص تقریباً ڈیڑھ ارب ڈالر کے فنڈ کو بڑھانے کیلئے تیار نہیں ہیں اس کی وجہ سے رواں مالی سال کیلئے چند محکموں کے اخراجات کابجٹ منظور نہیں ہوسکا۔ اس بحران کے سبب ان محکموں کا شٹ ڈاؤن ہوگیا ہے جن میں ہوم لینڈ سکیورٹی کا محکمہ بھی شامل ہے جو سرحدوں پر سکیورٹی کا ذمہ دار ہے۔ صدر ٹرمپ نے بحران کے خاتمے اور ڈ یموکریٹس کو رضامند کرنے کیلئے اپنی طرف سے یہ اقدام کیا ہے کہ ڈاکا کے قانون میں تین سال کی توسیع کردی ہے جسے ڈیمو کریٹس نے رد کردیا ہے صدر نے آسمانی آفات سے بچ کرامریکہ میں آنیوالوں کیلئے بھی تین سال کی توسیع دینے کا ارادہ ظاہر کیا ہے لیکن اس کے باوجود تاحال مفاہمت کی کوئی صورت نہیں نکلی۔دوسری جانب اپو ز یشن جماعت ڈیموکریٹس نے صدر کی پیشکش مسترد کردی، ہاؤس سپیکر نینسی پیلو سی نے کہا صدر ٹرمپ کی کوئی بھی پیش کش قبول نہیں اور وہ انسانی جانوں کے مسئلے کے حل کیلئے سنجیدہ طریقے سے کچھ نہیں کر رہے۔یاد رہے صدر ڈونلڈ ٹرمپ کی جانب سے تارکین کے خلاف سخت ایکشن پر لاکھوں سرکاری ملازمین سراپا احتجاج ہیں اور شٹ ڈاؤن کی وجہ سے تقر یبا 8 لاکھ سرکاری ملازمین کام نہیں کر رہے جس کی وجہ سے کئی محکموں کا نظام بری طرح متاثر ہے۔سرکاری ملازمین کی جانب سے شٹ ڈاؤ ن امریکہ کی تاریخ کا طویل ترین شٹ ڈاؤن ہے جو 28ویں دن میں داخل ہوچکا ہے۔

ٹرمپ پیشکش

مزید : صفحہ اول