” عمران خان اپنی جان ہتھیلی پر رکھ لو اور ۔۔۔ “ سانحہ ساہیوال میں مارے جانے والے خلیل اور ذیشان کے محلے دار نے وزیر اعظم کو پیغام دے دیا

” عمران خان اپنی جان ہتھیلی پر رکھ لو اور ۔۔۔ “ سانحہ ساہیوال میں مارے جانے ...
” عمران خان اپنی جان ہتھیلی پر رکھ لو اور ۔۔۔ “ سانحہ ساہیوال میں مارے جانے والے خلیل اور ذیشان کے محلے دار نے وزیر اعظم کو پیغام دے دیا

  

لاہور (ڈیلی پاکستان آن لائن) سانحہ ساہیوال میں جاں بحق ہونے والے افراد کے محلے داروں کی جانب سے سخت غم و غصے کا اظہار کیا جارہا ہے۔ محلے داروں کا کہنا ہے کہ ذیشان دہشتگرد نہیں تھا، اگر عمران خان اس کیس میں انصاف اور مدینے کی ریاست قائم کرنا چاہتے ہیں تو اپنی جان ہتھیلی پر رکھ لیں۔

نجی ٹی وی جی این این کے پروگرام میں گفتگو کرتے ہوئے سانحہ ساہیوال میں جاں بحق افراد کے شیخ یوسف نامی بزرگ محلے دار نے کہا کہ خلیل انتہائی نیک آدمی تھا ، وہ اس کی دکان سے سودا سلف لیتے تھے۔ اس نے اپنے مرحوم چچا کے کہنے پر عمران خان کو ووٹ دیا تھا کیونکہ عمران خان نے مدینے کی ریاست کا وعدہ کیا تھا۔ بزرگ محلے دار نے وزیر اعظم کو مخاطب کرکے کہا ”عمران خان اگر تم نے مدینے کی ریاست کا وعدہ کیا ہے تو پھر جان ہتھیلی پر رکھ لو اور انصاف کرو“۔

ذیشان کے بھائی احتشام کے کلاس فیلو نے کہا ہم تو ذیشان بھائی کے ہاتھوں میں پلے بڑھے ہیں، ہم انہیں بچپن سے جانتے ہیں وہ انتہائی شریف آدمی تھے۔

ایک اور نوجوان محلے دار نے کہا کہ ذیشان بھائی بہت اچھے اور پانچ وقت کے نمازی تھے، دہشتگرد کیلئے نمازی باہر نہیں آتے۔ اتوار کو جن لوگوں نے فیروز پور روڈ پر احتجاج کیا وہ محلے کی مسجد کے نمازی تھے۔

مزید : قومی