وزیراعظم کا انتباہ!

وزیراعظم کا انتباہ!

  



وزیراعظم عمران خان نے خبردار کیا ہے کہ کنٹرول لائن پر بھارتی حملے نہ رکے تو ہم خاموش نہیں رہیں گے ان کا کہنا ہے کہ ایل او سی پر بھارتی مظالم بڑھتے جاتے ہیں، نہتے کشمیریوں پر حملوں میں اضافہ ہو رہا ہے، جبکہ بھارت کی جانب سے جعلی آپریشن کا خدشہ اپنی جگہ موجود ہے۔ انہوں نے اقوام متحدہ سے کہا ہے کہ وہ بھارت پر دباؤ ڈالے، مقبوضہ کشمیر میں مبصر مشن بھیجے جو مظالم کا جائزہ لے، وزیراعظم عمران خان نے پہلی مرتبہ انتہائی انداز اختیار کیا، اس سے قبل نہ صرف وہ بلکہ ہمارے دفتر خارجہ کا موقف بھی یہی رہا کہ پاکستان امن کا داعی اور امن ہی سے رہنا چاہتا ہے، تاہم امن کی اس خواہش کو مجبوری نہ جانا جائے کہ پاکستان اپنا دفاع کرنا جانتا اور ہماری مسلح افواج ہر صورت حال سے نبرد آزما ہونے کی اہلیت رکھتی ہیں، انہوں نے یہ بھی باور کرایا کہ دونوں ہمسایہ ملک جوہری اہلیت کے حامل ہیں اور ان کے درمیان جنگ دنیا بھر کے لئے نقصان دہ ہو گی۔ وزیراعظم بھارتی حکومت، وزیراعظم نریندر مودی، بھارتی افواج اور آر ایس ایس کے مسلسل غیر اخلاقی، غیر قانونی اور غیر آئینی اقدامات کے خلاف احتجاج کرتے چلے آرہے ہیں، لیکن بھارت نے کسی بھی مرحلے پر اپنی شدت پسندی اور ”ریاستی دہشت گردی“ کو نہیں روکا اب حالات یہ ہیں کہ بھارت میں انسانی حقوق کی پامالی کے خلاف پورا ملک سراپا احتجاج ہے لیکن نریندر مودی اور ان کے ہمنوا دہشت پسند مسلسل ڈھیٹ پن کا م ظاہرہ کر رہے ہیں اور خود اپنے عوام پر بھی ریاستی تشدد ہی آزما رہے ہیں۔ مقبوضہ کشمیر مسلسل عقوبت اور قید خانے میں تبدیل ہوا ہے اور مواصلات کے ذرائع بھی بحال نہیں ہوئے۔ بھارتی حکومت نے کئی بار حالات سدھارکا پروپیگنڈہ کرکے بعض وفود (معہ سفارتی) کو مقبوضہ کشمیر کا کنٹرولڈ دورہ کراکے یہ ثابت کرنے کی کوشش کی کہ مقبوضہ کشمیر میں حالات قابو میں لیکن یہ جادو نہ چل سکا اور الٹا یہ دورے اس کے گلے پڑ گئے۔ اب جو ہمارے وزیراعظم نے خبردار کیا تو اس کا مطلب یہ ہے کہ وہ بھی زچ ہو گئے ہیں، ایسے میں اب اگر بھارتی حکومت اور مسلح افواج کی طرف سے مسلسل مظالم ہوتے رہے تو کسی بھی لمحے کچھ بھی ہو سکتا ہے۔ امریکی نائب وزیرخارجہ ایلس ویلز پاکستان کے دورے پر ہیں، وہ یہاں وزیرخارجہ اور وزیراعظم سے بھی ملیں گی۔ اس سے قبل وہ سری لنکا اور بھارت سے ہو کر آئی ہیں، یہ بہتر وقت ہے کہ ان کے ذریعے امریکہ کو بھی احساس دلایا جائے کہ انسانی حقوق کا علمبردار ہونے کا دعویٰ کرنے والا ملک امریکہ اب اپنا کردار ادا کرے اور ان مظالم کو رکوائے۔

مزید : رائے /اداریہ