مقبوضہ وادی میں بھارتی مظالم کا بازار گرم، مزید 3نوجوان شہید، گھر بھی بارود سے تباہ، لاک ڈاؤن کو 170روز مکمل

  مقبوضہ وادی میں بھارتی مظالم کا بازار گرم، مزید 3نوجوان شہید، گھر بھی ...

  



سرینگر (مانیٹرنگ ڈیسک، نیوزایجنسیاں) مقبوضہ کشمیر میں بھارت کے مظالم جاری ہیں، ضلع شوپیاں میں بھارتی فوج نے 3 نوجوانوں کو شہید کر دیا۔ مقبوضہ وادی میں کرفیو اور لاک ڈاؤن کو آج 170 واں روزہے۔مقبوضہ کشمیر کے ضلع شوپیاں میں بھارت کی فوجی نے ریاستی دہشت گردی کا مظاہرہ کرتے ہوئے ایک گاؤں کو گھیرے میں لے کرتینوں نو جو انوں کو شہید کیا۔ بھارتی فوج نے آپریشن کے دوران بھاری اسلحہ اور کیمیکل گن پاوڈر استعمال کیا، غاصب فوج نے ایک گھر کو کیمیکل گن پاوڈر سے تباہ کر دیا۔ بھارتی فوج علاقے میں گشت کر کے خوف و ہراس بھی پھیلاتی رہی۔مقبوضہ وادی میں زندگی آج بھی قید ہے، 170روز سے دکانیں، کاروباری مراکز اور ٹرانسپورٹ بند، تعلیمی اداروں پر تالے پڑے ہیں۔ مسلسل لاک ڈاؤن کے باعث صورتحال انتہائی سنگین ہو چکی ہے۔ آپریشن کے بہانے کشمیری عوام پر ظلم و ستم کا بازار گرم ہے۔ انٹرنیٹ اورموبائل سروس بدستوربند ہیں۔بارہ مولا،شوپیاں سمیت مختلف علاقوں میں بھارتی فورسزنے نام نہاد آپریشن کے بہانے متعدد کشمیری نوجوانوں کوگرفتارکرلیا جبکہ مسلسل لاک ڈاؤن اورپابندیوں سے مقبوضہ وادی میں کھانے پینے کی اشیااوردواں کا بحران سنگین ہوگیا۔بھارت کے یوم جمہوریہ سے پہلے سیکورٹی مزیدسخت کردی گئی ہے اور وادی میں اضافی دستے تعینات کردئیے گئے ہیں،مظالم کے باوجود حق خودارادیت کیلئے پرعزم کشمیریوں نے بھارت کیخلاف مظاہرے کیے۔دوسری طرف بھارتی وزارت داخلہ نے ویب سائٹ پر مقبوضہ جموں کشمیر اور لداخ کے غلط اعدادوشمار بتاتے ہوئے کشمیرکی آبادی کو10گناکم ظاہرکر دیا۔ کشمیر میڈیا سروس کی جانب سے جاری کی گئی تفصیلات کے مطابق بھارتی وزارت داخلہ نے کشمیر دشمنی کامظاہرہ کرتے ہوئے اپنی ویب سائٹ پر مقبوضہ کشمیرکی آبادی کودس گنا کم ظاہر کردیا اور مقبوضہ جموں اور لداخ سے متعلق بھی غلط اعداد وشمارظاہرکئے گئے ہیں۔

مقبوضہ کشمیر

مزید : صفحہ اول