حکومت سے جواب طلب فیصل واوڈا کی نا اہلی، وکلاء کو آئندہ تیاری کرکے پیش ہونے کی ہدایت

حکومت سے جواب طلب فیصل واوڈا کی نا اہلی، وکلاء کو آئندہ تیاری کرکے پیش ہونے ...

  



لاہور(نامہ نگارخصوصی)چیف جسٹس لاہور ہائیکورٹ مسٹر جسٹس مامون رشیدشیخ نے ٹاک شومیں بوٹ دکھانے کے معاملے پرپی ٹی آئی کے راہنما اور وفاقی وزیر فیصل واوڈا کو نا اہل قرار ولوانے کے لئے دائردرخواست کی سماعت کرتے ہوئے درخواست گزارکے وکیل کوآئندہ سماعت پرتیاری کرکے پیش ہونے کی ہدایت کردی۔امن ترقی پارٹی کے چیئرمین فائق شاہ کی طرف سے دائر اس درخواست میں ٹاک شو میں بوٹ دکھانے اورگفتگو کوبنیاد بنا کرموقف اختیار کیاگیاہے کہ فیصل واوڈا نے ملکی اداروں پر سنگین سیاسی الزامات لگا کر اپنے حلف سے غداری کی، جوڈیشل کمیشن مقرر کر کے سازش کی مکمل انکوائری کروائے جائے، درخواست میں مزید کہا گیا کہ میمو گیٹ میں حسین حقانی اور ڈان لیکس کے مجرموں کو قرار واقعی سزا دی ہوتی تو آج واوڈا گیٹ کیس کا سامنا نہ ہوتا،فیصل واوڈا والے معاملے میں نجی چینل اور اینکرپرسن کا کردار بھی مشکوک ہے،پاکستان کے اعلیٰ جمہوری و دفاعی اداروں کو بدنام کرنے کی سازش کے تمام کردار بے نقاب کرنے ہوں گے،وفاقی وزیر فیصل واوڈا نے اینکر پرسن حامد میر کے پروگرام میں خود قبول کیا کہ انہیں آئین پاکستان کی ان شقوں کا علم نہیں،ایسے افراد آئین کے آرٹیکلز 62 اور63کے تحت پارلیمنٹ ا و رکابینہ کا حصہ نہیں رہ سکتے،اہل اور حقدار افراد ہی پارلیمنٹ و کابینہ کے ممبر بن سکتے ہیں جبکہ واوڈا اس قابلیت پر پورا نہیں اترتے اس سازش کے پس منظر ماسٹر مائنڈ کوئی اور ہی ہے،اس سازش کے تحت آرمی سروسز ایکٹ کی ترمیم کو بھی مشکوک و متنازع بنا دیا گیاہے۔

فیصل واوڈا نا اہلی

مزید : صفحہ آخر