الاؤنس کی ادائیگی‘ مسائل حل نہ ہونے پر ڈاکٹرز کا احتجاج کا اعلان

الاؤنس کی ادائیگی‘ مسائل حل نہ ہونے پر ڈاکٹرز کا احتجاج کا اعلان

  



ملتان (وقائع نگار)سی ای او ہیلتھ آفس اور ڈاکٹر کے درمیان معاملات طے نہ ہو سکے۔مطالبات کی منظوری نہ ہونے پر ڈاکٹرز نے سی ای او ہیلتھ آفس کے گھیراو کا اعلان کر دیا۔ملتان سمیت شجاعباد و جلالپور کے ڈاکٹرز نے ایک ہفتے میں الاونس کی ادائیگی اور دیگر مسائل حل نہ ہونے کی صورت میں احتجاج کا اعلان کر دیا،ڈاکٹرز کا کہنا ہے کہ محکمہ پرائمری اینڈ سیکینڈری کئیر پنجاب کی جانب سے عدم توجہی کے باعث محکمہ صحت ملتان کے زیر انتظام چلنے والے سرکاری ہسپتالوں اور مراکز صحت پر کام کرنے(بقیہ نمبر43صفحہ12پر)

والے ڈاکٹرز شدید مسائل کا شکار ہو چکے ہیں،جبکہ سی او ہیلتھ ڈاکٹر منور عباس کئی بار یقین دہانی کے باوجود ڈاکٹرز کے مسائل حل کرنے میں ناکام ہو چکے ہیں،محکمہ صحت پنجاب کی جانب سے دیہی و بنیادی مراکز صحت پر کام کرنے والے ڈاکٹرز کو نان پریکٹسنگ الاؤنس ادا کرنے کے احکامات تقریباً پانچ ماہ قبل جاری کئے گئے تھے تاہم سی او ہیلتھ ملتان کی جانب سے اب تک ڈاکٹرز کو الاؤنس کہ فراہمی نہیں کی گئی جبکہ کنسلٹنٹ ڈاکٹرز بھی کنسلٹنٹ ایف سی پی ایس و دیگر الاؤنس سے محروم ہیں۔ادھر سی او ہیلتھ ملتان ڈاکٹر منور عباس نے ضلع کے 6 رورل ہیلتھ سنٹرز کے فنڈز کے اختیارات بھی سینئر میڈیکل آفیسر کے سپرد کرنے کی بجائے اپنے پاس رکھے ہوئے ہیں جس کے باعث دیہی مراکز صحت علاج کی سہولیات فراہم کرنے میں ناکام ہو چکے ہیں۔اس حوالے سے پی ایم اے ملتان کے نائب صدر ڈاکٹر مرتضی بلوچ کا کا کہنا ہے کے،ڈاکٹرز کے مسائل سے متعلق فائلز پر جب تک پیسوں کے پہیے نہ لگائے جائیں وہ فائلیں کئی کئی ماہ اٹکی رہتی ہیں جبکہ سی او ہیلتھ ملتان ڈاکٹر منور عباس اختیارات کا ناجائز فائدہ اٹھانے میں مصروف ہیں ادھر دن رات ڈیوٹیاں کرنے والے ڈاکٹرز کو نان پریکٹسنگ الاؤنس،کنسلٹنٹ الاؤنس اور ہاؤس رینٹ تک ادا نہیں کیا جا رہا جبکہ آر ایچ سی فنڈز تک سی او ہیلتھ نے اپنے پاس رکھے ہوئے ہیں،ایسی صورتحال میں ڈاکٹرز کیسے کام کریں گے،پی ایم اے ملتان کے عہدیداران کا اس موقع پر کہنا تھا کہ سیکرٹری ہیلتھ و ڈپٹی کمشنر ملتان فوری معاملے کا نوٹس لیں بصورت دیگر ایک ہفتے کے اندر مطالبات نہ مانے گئے تو ضلع ملتان کے ہسپتالوں مین بھرپور احتجاج کیا جائے گا۔

اعلان

مزید : ملتان صفحہ آخر