3لاکھ ٹن گندم در آمد کی جائیگی، صوبوں میں آٹا بحران بد ستور جاری، چینی بھی اڑھائی روپے کلو مہنگی، ای سی سی نے یوریا کھاد 400روپے بوری سستی کرنے کی منظوری دیدی

3لاکھ ٹن گندم در آمد کی جائیگی، صوبوں میں آٹا بحران بد ستور جاری، چینی بھی ...

  



اسلام آباد،کراچی، لاہورر،کوئٹہ،پشاور (مانیٹرنگ ڈیسک،نیوزایجنسیاں) اقتصاد ی رابطہ کمیٹی نے آٹے کے بحران پر قابو پانے کیلئے بغیر ریگولیٹری ڈیوٹی 3 لاکھ ٹن گندم درآمد کرنے کی منظوری دیدی، کسانوں کو ریلیف فراہم کرنے کیلئے یوریاکھاد بھی 400 روپے فی بوری سستی کرنے کی ہدایت کر دی گئی۔ حکام نے ای سی سی کو بتایا کہ پاسکو اور پنجاب کے پاس 41 لاکھ ٹن گندم کے ذخائر موجود ہیں، درآمدی گندم کی پہلی کھیپ 15 فروری تک پہنچ جائے گی۔ای سی سی نے ہدایت کی تین لاکھ ٹن گندم 31 مارچ تک پاکستان پہنچ جانی چاہیے۔ اقتصادی رابطہ کمیٹی نے کسانوں کو ریلیف فراہم کرنے کیلئے گیس انفراسٹرکچر ڈویلپمنٹ سیس ختم کرنے کی بھی منظوری دیتے ہوئے ہدایت کی کہ کھاد فی بوری 400 روپے سستی کی جائے۔دوسری جانب آٹے کے بحران کے باعث سندھ حکومت نے صوبے میں شہریوں کو سرکاری نرخ پر سستے آٹے کے سٹالز لگاکر فراہمی شروع کردی ہے۔سندھ حکومت کا پاسکو سے مزید گندم خریدنے کافیصلہ،تفصیلات کے مطابق وزیراعلیٰ سندھ مراد علی شاہ کی زیرصدارت گندم کے مسئلے پر اجلاس ہوا جس میں پاسکوسے مزید گندم خرید نے کا فیصلہ کیا گیا۔ اجلاس میں چیف سیکریٹری ممتاز شاہ، وزیر خوراک ہری رام، وزیر زراعت اسماعیل راہو، صوبائی مشیر مرتضیٰ وہاب، پرنسپل سیکریٹری ساجد جمال ابڑو، سیکریٹری خزانہ حسن نقوی، سیکریٹری خوراک لائیق احمد، سیکریٹری جنگلات رحیم سومرو شریک تھے۔صوبائی وزیر وزیر زراعت اسماعیل راہو کا کہنا ہے کہ کراچی، حیدرآباد، ٹھٹھہ، لاڑکانہ اور سکھر سمیت دیگر اضلاع میں آٹے کے سٹال لگائے گئے ہیں،کراچی کے 22 سے 25 بچت بازاروں میں سستے آٹے کے سٹال لگائے گئے ہیں۔صوبائی وزیر نے بتایا کہ شہری سٹالوں سے 10 کلو آٹے کا تھیلا سرکاری نرخ پر خرید سکتے ہیں جبکہ بچت بازاروں میں 10 کلو آٹے کا تھیلا 430 روپے میں دستیاب ہے۔ادھر لاہور میں بیشتر دکانوں پر 10 اور 20 کلو کے آٹے کا تھیلا نایاب ہوگیا ہے۔دکانداروں کا کہنا ہے کہ ہمیں 15 روز سے آٹے کی سپلائی نہیں مل رہی جب کہ چکیوں پر بھی آٹے کی فی کلو قیمت 70 روپے برقرار ہے۔چکی مالکان کا کہنا ہے کہ آٹا فی کلو 70 روپے سے کم فروخت نہیں کرسکتے، بازار میں گندم مہنگی مل رہی ہے جس کے باعث قیمت کم نہیں کرسکتے۔علاوہ ازیں وزیراعلیٰ بلوچستان جام کمال نے صوبے میں گندم اور آٹے کے بحران کا نوٹس لے لیا اور متعلقہ حکام کو آٹے اور گندم کی سرکاری نرخ پرفروخت یقینی بنانیکی ہدایت کی گئی ہے۔وزیراعلی نے گندم اور آٹے کی مصنوعی قلت اور ذخیرہ اندوزی کرنے والوں کے خلاف کارروائی کی ہدایت کی اور ساتھ ہی محکمہ خوراک کو گوداموں میں دستیاب گندم فلور ملز کو دینے کے بھی احکامات دیدئیے۔ادھر خیبرپختونخوا آٹا ڈیلرز ایسوسی ایشن کے صدر کا کہناہے کہ پنجاب سے فائن آٹے کی ترسیل بحال ہوگئی ہے، مارکیٹ میں آٹا موجود ہے اور قیمتیں کم کردی گئی ہیں۔صدر نے بتایا کہ پنجاب س آٹا لے کرگاڑیاں آج پہنچ جائیں گی، آٹے کے 20 کلو تھیلے کی قیمت میں 120 روپے کمی کردی گئی ہے جس کے بعد اس کی قیمت 1090 روپے ہوگی۔خیبرپختونخوا میں نان بائی ایسوسی ایشن نے پشاور سمیت صوبے کے مختلف شہروں میں ہڑتال کر دی۔ ذرائع کے مطابق نان بائی ایسوسی ایشن کی جانب سے ہڑتال کی کال دینے کے بعد پشاور، کوہاٹ، ہنگو اور ہزارہ ڈویژن میں تندور بند کر دیئے گئے ہیں۔نان بائی ایسوسی ایشن نے دوسرے مرحلے میں نوشہرہ، چارسدہ اور مردان تک ہڑتال کا دائرہ بڑھانے کی دھمکی بھی دے دی ہے۔خیبرپختونخواکے وزیر اطلاعات شوکت یوسفزئی نے کہا کہ ان کی حکومت کسی صورت روٹی مہنگی نہیں ہونے دے گی، ایک دو روز میں آٹا وافر مقدار میں دستیاب ہو گا۔دریں اثناء صوبائی وزیر اطلاعات شوکت یوسفزئی نے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا ہے کہ پنجاب سے آٹے کی فراہمی بحال ہونے کے بعد منگل سے صورتحال معمول پر آجائے گی۔انہوں نے کہا کہ نان بائی ایسوسی ایشن سے ہڑتال ختم کروانے کے لیے رابطے میں ہیں۔

آٹا بحران

لاہور(جنرل رپورٹر) آٹے کے بعد چینی بھی مہنگی ہو گئی۔ ہول سیل مارکیٹ میں چینی کی قیمت میں اڑھائی روپے فی کلو کا اضافہ ہو گیا ہے۔ جس کے بعد100 کلو چینی کا تھیلا 7300 سے بڑھ کر 7550 روپے کا ہوگیا ہے۔ چینی پرچون ریٹ پر 78 سے 80 روپے فی کلو فروخت ہونے لگی ہے۔شوگر ٹریڈرز ایسوسی ایشن کا کہنا ہے کہ چینی کی سرکاری قیمت پرچون نرخ 75 روپے کلو ہے۔ چینی کی قیمت میں ایک دم اضافہ مافیا نے کیا ہے۔ چینی کی قیمت میں اضافے کے بعد ہول سیل مارکیٹ میں چینی کی سپلائی شارٹ ہو گئی ہے۔ جبکہ چینی کی طلب بڑھنے کے بعد رسد میں کمی ہوئی تھی۔ جس وجہ سے چینی کی قمیت میں اضافہ ہوا ہے۔مارکیٹ ذرائع کا کہنا ہے کہ ایک دن میں اڑھائی روپے اضافہ غیر معولی ہے۔ حکومت کی جانب سے چینی کی سپلائی پر بروقت نوٹس نہ لیا گیا تو یہ اضافہ مزید بڑھ سکتا ہے۔ ہول سیل مارکیٹ میں چینی 76 روپے فی کلو فروخت کی جا رہی ہے اور پرچون مارکیٹ میں شہریوں کو چینی مزید مہنگی دستیاب ہو گی۔

چینی مہنگی

مزید : صفحہ اول