خیبر پختونخوا، نانبائی ایسوسی ایشن کی پشاور سمیت صوبے کے مختلف شہروں میں ہڑتال

  خیبر پختونخوا، نانبائی ایسوسی ایشن کی پشاور سمیت صوبے کے مختلف شہروں میں ...

  



پشاور (این این آئی)خیبرپختونخوا میں نان بائی ایسوسی ایشن نے پشاور سمیت صوبے کے مختلف شہروں میں ہڑتال کر دی۔ ذرائع کے مطابق نان بائی ایسوسی ایشن کی جانب سے ہڑتال کی کال دینے کے بعد پشاور، کوہاٹ، ہنگو اور ہزارہ ڈویژن میں تندور بند کر دیئے گئے ہیں۔نان بائی ایسوسی ایشن نے دوسرے مرحلے میں نوشہرہ، چارسدہ اور مردان تک ہڑتال کا دائرہ بڑھانے کی دھمکی بھی دے دی ہے۔خیبرپختونخواکے وزیر اطلاعات شوکت یوسفزئی نے کہا کہ ان کی حکومت کسی صورت روٹی مہنگی نہیں ہونے دے گی، ایک دو روز میں آٹا وافر مقدار میں دستیاب ہو گا۔دریں اثناء صوبائی وزیر اطلاعات شوکت یوسفزئی نے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا ہے کہ پنجاب سے آٹے کی فراہمی بحال ہونے کے بعد منگل سے صورتحال معمول پر آجائے گی۔انہوں نے کہا کہ نان بائی ایسوسی ایشن سے ہڑتال ختم کروانے کے لیے رابطے میں ہیں۔واضح رہے کہ اس سے قبل خیبرپختونخوا حکومت نے نان بائیوں کو رعایتی قیمت پر گندم دینے کی پیشکش کی تھی جو انہوں نے مسترد کردی۔شوکت یوسفزئی نے کہاکہ حکومت نے نان بائیوں کو 85 کلو کی بوری 4600 سے کم کرکے 3600 پر دینے کی پیشکش کی ہے جس کے جواب میں صدر نان بائی ایسوسی ایشن محمد اقبال نے کہا کہ لال آٹا خیبر پختونخوا میں استعمال نہیں کیا جاتا، عوام اسے کھانا پسند نہیں کرتے۔محمد اقبال کا کہنا تھا کہ حکومت وہ آٹا سستا کر رہی ہے جو اس صوبے کی ضرورت ہی نہیں۔انہوں نے کہاکہ خیبرپختونخوا میں پنجاب سے آنے والا آٹا استعمال کیا جاتا ہے۔صدر نان بائی ایسوسی ایشن نے کہا کہ صوبے میں فائن آٹا استعمال کیا جاتا ہے جس کی قیمت 4 ہزار سے بڑھا کے 5200 کردی گئی ہے اور نان بائی 5200 سو روپے کی بوری میں 10 روپے کی روٹی کیسے بیچ سکتے ہیں؟۔

نان بائی

پشاور(سٹی رپورٹر)ملک بھرکی طرح صوبائی دارالحکومت پشاورمیں بھی آٹے کی قیمتوں میں بے تحاشااضافہ اوربندش کیخلاف نانبائیوں نے مکمل شٹرڈاؤن کیاچنانچہ نانبائیوں نے 170گرام وزن کی پکی روٹی کی قیمت پندرہ روپے مقررکرنے کانوٹیفیکیشن جاری کرنے تک ہڑتال جاری رکھنے کااعلان کیاہے جبکہ خیبرپختونخواحکومت نے پکی روٹی کی قیمت بڑھانے سے صاف انکارکرتے ہوئے نانبائیوں کوسستے داموں فائن آٹادینے کی پیشکش کردی ہے پشاورکی ضلعی انتظامیہ نے ہڑتال کااعلان کرنے والے نانبائیوں کی ہڑتال کوناکام بنانے کیلئے گزشتہ شب سے ہی گرفتاریوں کاعمل شروع کردیاتھاتاہم چندنانبائی گرفتارہونے کے باوجودنانبائیان ایسوسی ایشن خیبرپختونخوانے ہڑتال کی اورشہربھرمیں مکمل شٹرڈاؤن رہا نانبائیوں کی ہڑتال کے باعث شہریوں کوہونیوالی مشکلات سے پریشان خیبرپختونخواحکومت نے نانبائیوں کی ہڑتال ختم کرنے کیلئے ڈپٹی کمشنرپشاورعلی محمداصغرکوٹاسک سونپاجنہوں نے گزشتہ روزنانبائیان ایسوسی ایشن خیبرپختونخواکے صدرمحمداقبال یوسفزئی اوردیگرتاجرتنظیموں کے ساتھ دن میں دوبارمذاکرات کیے تاہم دونوں مرتبہ ہونے والے مذاکرات بغیرکسی نتیجے پرپہنچنے کے ناکام ہوئے اورنانبائیان ایسوسی ایشن نے پکی روٹی کی قیمت میں اضافہ کانوٹیفیکیشن جاری نہ کرنے تک ہڑتال جاری رکھنے کااعلان کیانانبائیوں کی ہڑتال کی وجہ سے شہریوں کودن بھرمشکلات کاسامناکرناپڑاجبکہ چندایک جگہوں پرکھلے رہنے والے نانبائیوں پرشدیدرش رہااورشہری قطاروں میں کھڑے ہوکرروٹی خریدتے رہے ضلعی انتظامیہ نے نانبائیوں کی ہڑتال کوناکام بنانے اورہڑتال کاحصہ نہ بننے والے نانبائیوں کوتحفظ فراہم کرنے کیلئے باقاعدہ طورپرمہم کاآغازکردیاہے ڈپٹی کمشنر پشاور علی محمد اصغر نے شہر میں مختلف تندروں کا دورہ کیا،اس موقع پر میڈیا سے گفتگو میں ان کا کہنا تھا کہ مالکان تندورکھولنا چاہتے ہیں لیکن نانبائی ایسوسی ایشن منع کررہی ہے،انتظامیہ تندورمالکان کومکمل تحفظ فراہم کرے گی،بہت سے مالکان تندورکھولنے کے خواہشمند ہیں،انہوں نے کہا نانبائی ایسوسی ایشن ناجائز مطالبہ کررہے ہیں نام نہاد ایسوسی کے ہتھکنڈوں سے مرعوب نہیں ہونگے،ڈی سی کا مزید کہنا تھا کہ پنجاب سے 25 ٹرک آٹا پہنچ چکا ہے،آٹے کے مزید 100 ٹرک بھی آج پہنچ جائیں گے نابائیوں کی ہڑتال کافا ئدہ اٹھاتے ہوئے چھوٹے ہوٹل مالکان نے بھی شہریوں کوخوب لوٹااورتقریباً150گرام کی روٹی 20روپے پرفروخت کرتے رہے جسے مجبورشہری خریدنے پرمجبورتھے ادھرخیبرپختونخواحکومت نے بھی ہڑتالی نانبائیوں کے مطالبات کوناجائزقراردیتے ہوئے پکی روٹی کی قیمت بڑھانے سے صاف انکارکردیاخیبرپختونخواکے وزیراطلاعات شوکت یوسفزئی نے کہاکہ نانبائیوں کی ہڑتال بلاجوازہے اوریہ کہ صوبائی حکومت نانبائیوں کوسستے داموں فائن آٹافروخت کرنے کیلئے تیارہیں چنانچہ ہڑتالی نانبائیوں کوجوپیشکش کی تھی آج بھی وہی پیشکش موجودہے لہذانانبائی ہڑتال ختم کرکے حکومت کی پیشکش کوقبول کرے۔

مزید : صفحہ اول