کوئی مائی کالعل 18ویں ترمیم کیساتھ چھیٹرچھاڑنہیں کرسکتا، اسفند یارولی

کوئی مائی کالعل 18ویں ترمیم کیساتھ چھیٹرچھاڑنہیں کرسکتا، اسفند یارولی

  



نوشہرہ (بیورورپورٹ) عوامی نیشنل پارٹی کے مرکزی صدر اسفندیار ولی خان نے کہا ہے کہ کوئی مائی کا لال 18 ویں ترمیم کے ساتھ ساتھ نہیں چھیڑ سکتا اور کسی نے غلطی سے 18 ویں ترمیم کے ساتھ چھیڑ چھاڑ کی تو ملک میں انارکی پھیل سکتی ہے جس کے نتائج کچھ بھی ہوسکتے ہے اور تمام تر ذمہ داریاں ان پر ہوگی جس نے 18 ترمیم کے ساتھ چھیڑ چھاڑ کی کیونکہ 18 ویں ترمیم کی بقا اور پاکستان لازم و ملزوم ہے ذولفی بخاری کا ریفرنس راتوں رات ختم ہو جاتا ہے اور خورشید شاہ جیل میں پڑا ہوا ہے آصف علی زرداری کی ہمشیرہ اور نواز شریف کی بیٹی مریم نواز عدالتوں میں پیشی پے پیشیاں بھگت رہی ہے اور کپتان کی ہمشیرہ سے کوئی پوچھنے والا ہی نہیں کیا سلائی مشین سے اربوں روپے کمایا جاسکتا ہے اگر نہیں تو عمران خان کی بہن حلیمہ کے پاس اربوں روپے کہاں سے آئے کیا وہ احتساب سے مستنی ہے یا قومی احتساب بیورو کے چیئرمین کو کپتان کی ہمشیرہ کے اربوں روپے نظر نہیں آ رہے ہیں ان خیالات کا اظہار انہوں نے نوشہرہ میں فخر افغان باچا خان اور رہبر تحریک خان عبدالولی خان کی برسی کے موقع پر منعقدہ تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کیا اس موقع پر مرکزی سینئر نائب صدر سابق وزیر اعلٰی خیبرپختونخوا امیر حیدر خان ہوتی، مرکزی جنرل سیکرٹری میاں افتخار حسین، صوبائی صدر عوامی نیشنل پارٹی ایمل ولی خان سابق وفاقی وزیر غلام احمد بلور، سابق صوبائی وزیر حاجی ہدایت اللہ خان، سردار حسین بابک، عوامی نیشنل پارٹی کے ضلعی صدر جمال خان خٹک اور جنرل سیکرٹری انجنیئر حامد علی خان نے بھی خطاب کیا اسفندیار ولی خان نے اپنے خطاب میں مزید کہا کہ پنجاب حکومت خیبرپختونخوا کے عوام پر گندم کی سپلائی کی ترسیل کی بندش فیصلے پر غور کریں ایسا نہ ہو کہ ان کے اس فیصلے پنجاب اور خیبر پختون خواہ کی قائم بھائی چارے کو نقصان پہنچ جائے انہوں نے کہا کہ 20 18 کے انتخابات میں ہماری مینڈیٹ چوری کرکے ہم پر ایک سازش کے تحت نا اہل حکمران مسلط کر دئیے گئے ہیں تاکہ ہم کو عوام سے دور رکھا جا سکے لیکن نوشہرہ میں ہمارے اکابرین کی برسی کے موقع پر منعقد تقریب میں عوام نے جنات کی اس سازش کو ناکام بنا کر باچا خان اور رہبر تحریک خان عبدالولی خان کی فکر، سوچ، افکار، شخصیت اور پختون قوم کے لئے دی گئی قربانیوں کو خراج تحسین پیش کرکے ثابت کر دیا کہ ہم باچا خان اور ولی خان کے پیروکار ہیں اور رہیں گے انہوں نے مزید کہا کہ پاکستان کو ریاست مدینہ سے تشبیہ دینے والوں کیا ریاست مدینہ میں بھی معصوم بچوں اور بچیوں کی عزتیں تار تار ہونے پر حکمران طبقہ خاموش رہتا ہے انہوں نے مزید کہا کہ ہماری نئی نسل ٹماٹر گیس بجلی اور آٹیکی بحران سے نڈھال ہوکر ان تمام بنیادی سہولیات کی شکل تک بھول گئی ہے انہوں نے مزید کہا کہ عوام کی چیخیں نکالنے والوں کا بی آر ٹی، معالم جبہ، غیر ملکی فنڈنگ سمیت دیگر انکوائریوں کی اعلان سے ہی چیخیں نکل گئی جو کہ ساری قوم نے سن لیں۔

مزید : صفحہ اول