بلوچستان میں گیس پریشر کا بڑھتا ہوا بحران,ڈپٹی سپیکر قومی اسمبلی نے بڑا قدم اٹھا لیا

بلوچستان میں گیس پریشر کا بڑھتا ہوا بحران,ڈپٹی سپیکر قومی اسمبلی نے بڑا قدم ...
 بلوچستان میں گیس پریشر کا بڑھتا ہوا بحران,ڈپٹی سپیکر قومی اسمبلی نے بڑا قدم اٹھا لیا

  



کوئٹہ(ڈیلی پاکستان آن لائن) ڈپٹی سپیکر قومی اسمبلی قاسم خان سوری نے جنرل منیجر سوئی سدرن گیس کمپنی بلوچستان کو گیس پریشر کی بحالی کے حوالے سے ٹیلی فونک رابطہ کیا ہے۔

قاسم خان سوری اور جی ایم سوئی سدرن گیس کے درمیان گیس پریشر میں کمی اور لوڈشیڈنگ کے سلسلے میں تفصیلی بات چیت ہوئی۔ قاسم سوری نے کہا کہ رواں دنوں بلوچستان میں سردی کی شدت میں انتہائی اضافہ ہوچکا ہے تو دوسری جانب گیس کی پریشر میں کمی او رلوڈشیڈنگ سے لوگوں کو شدید مشکلات کا سامنا ہے اس لئے ضروری ہے کہ انہیں بروقت اور فوری طور پر گیس کی فراہمی یقینی بنائی جائے۔ اس سلسلے میں میں نے مرکزی سطح پر بھی آواز اٹھائی ہے اور قومی اسمبلی کے فلور پر وفاقی وزیر عمر ایوب ترین سے اس مسئلے سے متعلق وضاحت طلب کرلی ہے اور مطالبہ کیا کہ جس صوبے سے میں منتخب ہوا ہوں اس صوبے سے پورے ملک کو گیس کی سپلائی کی جارہی ہے مگر بدقسمتی سے صوبے کے دور دراز علاقے تو کجا صوبائی دارالحکومت کوئٹہ بھی شدید سردی میں اس نعمت سے محروم ہے۔ چونکہ یہ مسئلہ بہت پرانا اور پیچیدہ ہے اور اس کو حل ہونے میں وقت لگے گا لیکن موجودہ صورتحال کو مدنظر رکھتے ہوئے ہنگامی اور ایمرجنسی بنیادوں پر بلوچستان کے عوام کو گیس کی فراہمی کرنا ہماری اولین ذمہ داریوں میں سے ایک ہے تاکہ لوگوں کو موسم کی سختیوں سے بچایا جاسکے اور صوبے کے عوام کا دیرینہ مطالبہ حل ہوسکے۔ اس موقع پر جنرل منیجر سوئی سدرن گیس بلوچستان نے قاسم خان سوری کو بلوچستان کے لئے نئے منظوری شدہ گیس کے حوالے سے نوید سنائی اور یقین دہانی کراتے ہوئے کہا کہ بلوچستان کی گیس کی ضروریات کو پوری کرنے کے لئے مزید سوئی سدرن گیس فراہم کرنے کی ہمیں منظوری مل چکی ہے جس پر تیزی سے عمل درآمد شروع ہوچکا ہے بلوچستان کی ضروریات اور سردی کی شدت کو مدنظر رکھتے ہوئے گیس فراہم کیا جائے گا جس سے جلد ہی کوئٹہ سمیت بلوچستان کے مسئلے پر قابو پالیا جائے گا۔

مزید : علاقائی /اسلام آباد