’فارن فنڈنگ لیکس‘ کا پورا پنڈورا باکس کھل گیا تو لوگ ’پانامہ لیکس‘ کو بھول جائیں گے:حافظ حسین احمد

’فارن فنڈنگ لیکس‘ کا پورا پنڈورا باکس کھل گیا تو لوگ ’پانامہ لیکس‘ کو بھول ...
’فارن فنڈنگ لیکس‘ کا پورا پنڈورا باکس کھل گیا تو لوگ ’پانامہ لیکس‘ کو بھول جائیں گے:حافظ حسین احمد

  

کوئٹہ (ڈیلی پاکستان آن لائن) جمعیت علماء اسلام  کے’باغی رہنما ‘حافظ حسین احمد نےکہا ہےکہ  مسلم لیگ ن نےسعودی عرب،اُسامہ بن لادن، شیخ صواف جبکہ مولانا فضل الرحمان نےلیبیا کےکرنل قذافی اور عراقی صدر صدام حسین سے بھرپور امداد حاصل کی تھی،الیکشن کمیشن فارن فنڈنگ کے حوالے سے تمام جماعتوں کے ساتھ انصاف کرے ’فارن فنڈنگ لیکس‘ کا پورا پنڈورا باکس کھل گیا تو لوگ ’پانامہ لیکس‘ کو بھول جائیں گے۔

 میڈیا  سے گفتگو کرتے ہوئےحافظ حسین احمد نے کہا کہ الیکشن کمیشن کو چاہیے کہ وہ فارن فنڈنگ کے حوالے سے نہ صرف تحریک انصاف کے ساتھ انصاف کرے بلکہ مسلم لیگ ن اور جے یو آئی سمیت پاکستان ڈیموکریٹک موومنٹ( پی ڈی ایم) میں شامل دیگر جماعتوں کو بھی اہمیت دے ،کیوںکہ پی ڈی ایم اس لیے احتجاج کررہی ہے کہ فارن فنڈنگ کے حوالے سے صرف تحریک انصاف کو کیوں اہمیت دی جارہی ہے، ان کا نام کیوں شامل نہیں ہے؟۔ انہوں نے کہا کہ مسلم لیگ ن نے بھی سعودی عرب، اسامہ بن لادن، شیخ صواف اور مولانا فضل الرحمان نے لیبیا کے کرنل معمر قذافی اور عراق کے صدام حسین سے بھرپور امداد حاصل کی تھی، اس لیے ضروری ہے کہ الیکشن کمیشن تمام پارٹیوں کے ساتھ انصاف کرے، پی ڈی ایم میں شامل جماعتوں کی فارن فنڈنگ کے بارے تفصیلات الیکشن کمیشن حاصل کرے۔

انہوں نے کہا کہ الیکشن کمیشن نے تو 6سال تحریک انصاف کے فارن فنڈنگ کیس میں لگادئیے، پی ڈی ایم کی گیارہ جماعتوں کا معاملہ تو نامعلوم کتنا وقت لے گا؟ پی ڈی ایم کی جماعتوں کو فارن فنڈنگ کیس میں پہلے ہی شامل کیا جاتا تو انہیں الیکشن کمیشن کے سامنے احتجاج کرنے کی ضرورت درپیش نہ ہوتی،  میاں نواز شریف نے 2بار اسامہ بن لادن، شیخ صواف اور سعودی عرب سے بھرپور فنڈ حاصل کیا ،ایک بار آئی جے آئی کے قیام کے دوران جو آئی ایس آئی کے ڈی جی جنرل حمید گل کی چھتری تلے قائم کی گئی تھی اور دوسری بار محترمہ بینظیر بھٹو کے خلاف تحریک عدم اعتماد کے موقع پر پاکستان میں اب بھی اس کے عینی شاہد موجود ہیں جبکہ کچھ اللہ کو پیارے ہوچکے ہیں، فارن فنڈنگ لیکس کا پورا پنڈورا باکس کھل گیا تو لوگ پانامہ لیکس کو بھول جائیں گے۔

ایک سوال کے جواب میں حافظ حسین احمد نے کہا کہ کہا کہ 25جنوری کو کوئٹہ میں جمعیت علماء اسلام پاکستان کے حوالے سے مشاورتی اجلاس طلب کرلیا گیا ہے جس میں پارٹی کے آئندہ کے لائحہ عمل، الیکشن کمیشن میں فارن فنڈنگ سمیت رجسٹریشن کے حوالے سے معاملات پر غور کیا جائے گا۔

مزید :

علاقائی -بلوچستان -کوئٹہ -