لاپتہ افراد کیس: حکومت نے اپنی ذمہ داری محسوس کی بہتری کی امید کی جا سکتی ہے،اسلام آبادہائیکورٹ، سنگل بنچ کے دو فیصلے معطل

لاپتہ افراد کیس: حکومت نے اپنی ذمہ داری محسوس کی بہتری کی امید کی جا سکتی ...
لاپتہ افراد کیس: حکومت نے اپنی ذمہ داری محسوس کی بہتری کی امید کی جا سکتی ہے،اسلام آبادہائیکورٹ، سنگل بنچ کے دو فیصلے معطل

  

اسلام آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن)لاپتہ افراد کیس میں سنگل بینچ کے دو فیصلے اسلام آباد ہائیکورٹ نے معطل کردیئے، عدالت نے ریمارکس دیتے ہوئے کہاکہ حکومت نے اپنی ذمہ داری محسوس کی ہے اس سے بہتری کی امید کی جا سکتی ہے۔

دوران سماعت جسٹس عامر فاروق نے کہاکہ ہمارا مقصد یہی ہے کہ جن کے پیارے لاپتہ ہوجاتے ہیں ان کو واپس لایا جائے، اٹارنی جنرل خالد جاوید نے کہاکہ اگر اس معاملے میں معاوضہ دے دیا جاتا ہے تو ہر کیس میں یہی معاملہ ہو گا،عدالت نے اٹارنی جنرل سے استفسار کیا کہ کمیٹی کو سفارشات تیار کرنے میں کتنا وقت لگے گا؟ ،اٹارنی جنرل نے کہاکہ وقت طے نہیں کیا گیا لیکن ایک یا دو ماہ لگ سکتے ہیں، عدالت نے کہاکہ حکومت نے اپنی ذمہ داری محسوس کی ہے اس سے بہتری کی امید کی جا سکتی ہے.

عدالت نے اعلیٰ حکام کو ہرجانے ، شوکاز نوٹسز اور توہین عدالت کی کارروائی کے فیصلے معطل کر دیئے اورلاپتہ افراد سے متعلق کابینہ کمیٹی کی رپورٹ6 ہفتے میں طلب کرلی، عدالت نے کمیٹی کی رپورٹ طلب کرتے ہوئے کیس کی سماعت مارچ تک ملتوی کردی۔

مزید :

قومی -علاقائی -اسلام آباد -