نوعمر پائلٹ' زارا' تنہا دنیا کا چکر لگانے والی کم عمرترین خاتون بن گئیں

نوعمر پائلٹ' زارا' تنہا دنیا کا چکر لگانے والی کم عمرترین خاتون بن گئیں
نوعمر پائلٹ' زارا' تنہا دنیا کا چکر لگانے والی کم عمرترین خاتون بن گئیں
سورس: Instagram/zararutherford

  

لندن (ویب ڈیسک) بیلجیئن نژاد برطانوی نوعمر پائلٹ زارا رتھرفورڈ تنہا دنیا کا  چکر لگانے والی کم عمر ترین خاتون بن گئیں۔

برطانوی نشریاتی ادارے بی بی سی کے مطابق 19 سالہ زارا رتھر فورڈ کا سفر 18 اگست 2021 کو بیلجیئم کے شہر کورٹریج سے شروع ہواجو 20 جنوری 2022 کو ختم ہو ا، اس دوران انہوں نے 5 براعظموں میں سفر کیا جس میں انہوں نے 60 سے زائد بار سٹاپ بھی کیا۔نوعمر پائلٹ کا کہنا تھا کہ اس سفر میں سب سے مشکل حصہ سائبیریا کے اوپر سے گزرنا تھا کیونکہ وہ بہت سرد علاقہ تھا، اگر وہاں انجن رُک جاتا ہے تو ریسکیو کرنے میں کئی گھنٹے لگ جاتے ، زارا نے کہا کہ میں لوگوں کو اپنے تجربات کے بارے میں بتانے اور لوگوں کو  زندگی میں کچھ منفرد کرنے پر زور دوں گی ، انہوں نے کہا کہ 'اگر آپ کو موقع ملے تو آپ یہ ضرور کریں'۔

زارا نے ایک پریس کانفرنس کرتے ہوئے بتایا کہ 'میں بہت خوش ہوں کہ میں نے 32ہزار میل پرواز کا چیلنج مکمل کرلیا'، انہوں نے کہا کہ یہ سفر میں نے 3 ماہ  میں مکمل کرنا تھا  لیکن موسم کی خرابی  نے سفر میں تاخیر کی۔رپورٹس کے مطابق زارا کے والدین دونوں پائلٹ ہیں جبکہ  زارا دوسری لڑکیوں کو (سائنس، ٹیکنالوجی، انجینئرنگ اور ریاضی) کے پیشوں میں آنے کی ترغیب دینے کی امید رکھتی ہے۔اس کےعلاوہ زارا اس چیلنج کو مکمل کرنے والی سب سے کم عمر خاتون ہونے کے ساتھ ساتھ ایک مائیکرو لائٹ میں دنیا کا چکر لگانے والی پہلی خاتون اور پہلی بیلجیئم شہری ہیں جنہوں نے ہوائی جہاز کے ذریعے تنہا دنیا کا چکر لگایا۔

واضح رہے کہ اس سے قبل دنیا بھر میں تنہا سفرکرنے والی سب سے کم عمر خاتون امریکی شائستہ وائز تھیں  جو 2017ء  میں اپنے چیلنج کے وقت 30 سال کی تھیں۔

مزید :

بین الاقوامی -