عالمی برادری کشمیر میں خواتین کی تذلیل کا نوٹس لے،مشال ملک

  عالمی برادری کشمیر میں خواتین کی تذلیل کا نوٹس لے،مشال ملک

  

لاہور(لیڈی رپورٹر)لاہور کالج برائے خواتین یونیورسٹی شعبہ ابلاغ عامہ نے کشمیر سے الحاق کے سلسلے میں ”کشمیر کی آزادی کے لئے خواتین کی قیادت“کے موضوع پر ویبینار کاانعقاد کیا، حریت رہنما یاسین ملک کی اہلیہ مشال حسین ملک نے بطور مہمان خصوصی خطاب کرتے ہوئے کہا کہ مقبوضہ کشمیر میں بھارتی سیکیورٹی فورسز خواتین کی تذلیل کو جنگ کے آلہ کار کے طور پر استعمال کر رہی ہیں عالمی برادری کو اس کا نو ٹس لینا چاہیے۔ انہوں نے کہا کشمیری خواتین کوجابرانہ لاک ڈاؤن کے تحت سنگین مسائل درپیش ہیں اس کا فوری خاتمہ ہونا چاہیے۔ پروفیسر ڈاکٹر بشریٰ مرزا وائس چانسلرنے خطاب کرتے ہوئے کہاکہ کشمیری خواتین ہمیشہ سے ہی ایک مضبوط سیاسی آواز کا حصہ رہی ہیں جو کشمیر میں ہر طرف عام ہے اور عالمی برادری کو انہیں اس ظلم و ستم سے نجات دلانی چاہیے۔ سماجی کارکن پروفیسر ظفر سندھو نے کہا کہ تمام ممالک کو کشمیری خواتین کے درد کا احساس کرنا چاہئے۔ چیئر پرسن ڈیپارٹمنٹ آف ماس کمیونی کیشن ڈاکٹر انجم ضیا نے کہا کہ وہ وقت دور نہیں جب کشمیر پاکستان کا حصہ ہو گا

مزید :

میٹروپولیٹن 1 -