کوروناسےمعاشی تباہی، یورپ میں کھربوں روپے کے ریکوری فنڈ پر اتفاق

کوروناسےمعاشی تباہی، یورپ میں کھربوں روپے کے ریکوری فنڈ پر اتفاق
کوروناسےمعاشی تباہی، یورپ میں کھربوں روپے کے ریکوری فنڈ پر اتفاق

  

برسلز(ڈیلی پاکستان آن لائن)کورونا وائرس کی معاشی تباہ کاریوں کی بحالی کے لیے یورپی ممالک اب تک کے سب سے بڑے ریکوری فنڈ پر متفق ہوگئے۔

بی بی سی کے مطابق یورپ ممالک کے رہنماوں میں مسلسل چوتھی رات کے مذاکرات کے بعد ریکوری فنڈ پر اتفاق رائے ہوگیا۔ مذاکرات کےبعد 750  ارب  یورو کے کورونا وائرس ریکوری فنڈ پر اتفاقِ رائے ہواہے۔

اس وبائی امراض کے معاشی اثرات سے نمٹنے کے لیے 27 ممالک کے بلاک کو 750 بلین یورو کی گرانٹ اور قرضوں کی پیش کش کی جائے گی۔

اگرچہ اس معاہدے کی تفصیلات ابھی تک عام نہیں کی گئیں تاہم فرانسیسی صدر ایمانوئل میکرون نے کہا ہے کہ یہ ایک ’تاریخی دن‘ ہے۔

ابتدائی طور پر یہ مذاکرات دو دن میں طے پانا تھے لیکن ان کا دورانیے چوتھی رات تک چلا گیا۔

وبا سے سب سے زیادہ متاثرہ ممالک اور ریکوری فنڈ کے اخراجات کے بارے میں فکرمند ممالک کے رہنماؤں کے درمیان سرمائے کی فراہمی، ضوابط اور رسائی کے حوالے سے واضح اور گہرے اختلاف موجود تھے۔

یہ پیشرفت اس کے بعد ہوئی جب یورپی یونین کونسل کے صدر چارلس مشیل نے ایک نئی تجویز پیش کی جس سے قرضوں کے مقابلہ میں بطور گرانٹ دستیاب رقم کی مقدار کم ہو جاتی ہے۔

خیال رہے یورپ میں کورونا وائرس کی وجہ سے بڑے پیمانے پر اموات اور لاک ڈاون کی وجہ سے بڑے پیمانے پر مالی نقصان ہوا ہے۔

عالمی سطح پر کورونا وائرس سے دنیا بھر میں متاثرہ افراد کی تعداد ایک کروڑ 47 لاکھ سے تجاوز کر گئی ہے جبکہ اب تک اس مرض کے باعث چھ لاکھ سے زیادہ افراد ہلاک ہو چکے ہیں۔

مزید :

بین الاقوامی -بزنس -کورونا وائرس -