امریکہ کے ایک اور بحری بیڑے میں آگ بھڑک اٹھی

امریکہ کے ایک اور بحری بیڑے میں آگ بھڑک اٹھی
امریکہ کے ایک اور بحری بیڑے میں آگ بھڑک اٹھی

  

واشنگٹن(ڈیلی پاکستان آن لائن) امریکہ کے ایک اور بحری بیڑے میں آگ بھڑک اٹھی۔آگ ساحل پر کھڑے 'کرساج' نامی بحری بیڑے میں لگی'۔

غیر ملکی خبر رساں ادارےتسنیم کے مطابق امریکی ذرائع ابلاغ کا کہناہے کہ جنگی بحری بیڑے "کرسارج" میں اس وقت آگ لگی جب وہ "نورفورلک" بندرگاہ  پر کھڑا تھااور آگ پر کافی کوشش کے بعد قابو پا لیا گیا۔

نیو ایجنسی کے ذرائع کا کہنا ہے کہ آگ ویلڈنگ کےموقع پر پلاسٹک میں لگی جو پھر پھیل گئی۔آگ لگنے کے بعد ساحل میں کھڑی تمام کشتیوں اور جنگی بحری جہازوں میں تمام سرگرمیوں کو روک دیا گیا۔

گزشتہ اتوار کوبھی جنوب مغربی امریکا کی سین ڈیاگو بندرگاہ پر لنگر انداز جنگی بیڑے یو ایس ایس بونہوم رچرڈ میں نا معلوم وجوہات کی بنا پر دھماکہ ہوا جس کے بعد اس میں آگ لگ گئی تھی۔ بحری بیڑے کی سٹوریج میں کئی ٹن تیل ذخیرہ تھا جس کی وجہ سے بڑے حادثے کا خدشہ ظاہرکیاگیاتھا۔

آگ لگنے کے نتیجے میں کم سے کم بحریہ کے پچاس اہلکار بری طرح زخمی ہوئے اور امریکہ کے 4 سو سے زائد فائر فائٹرز 4 روز بعد اس آگ کو بجھانے میں کامیاب ہوئے۔اس کے علاوہ دو روز قبل امریکی ریاست انڈیانا کے شہر برنز ہاربر میں واقع آرسیلر میٹل اسٹیل ملز میں دھماکہ ہوا جس کی آواز دور دور تک سنی گئی۔ دھماکے کے بعد شدید آگ بھڑک اٹھی جس سے بڑے پیمانے پر نقصا ن ہوا۔

امریکی دفاعی فورسز کی جانب سے ان پراسرار دھماکوں سے متعلق زیادہ معلومات ظاہر نہیں کی گئی ہیں۔ 

مزید :

بین الاقوامی -