سپریم کورٹ میں پیشی سے ایک روز قبل مطیع اللہ جان کو اٹھالیاگیا، سی سی ٹی وی فوٹیج منظر عام پرآگئی

سپریم کورٹ میں پیشی سے ایک روز قبل مطیع اللہ جان کو اٹھالیاگیا، سی سی ٹی وی ...
سپریم کورٹ میں پیشی سے ایک روز قبل مطیع اللہ جان کو اٹھالیاگیا، سی سی ٹی وی فوٹیج منظر عام پرآگئی

  

اسلام آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن) سینیر صحافی مطیع اللہ جان کی اہلیہ نے بتایا ہے کہ ان کے شوہر کو ان کے سکول کےباہر سے اٹھالیاگیا ہے۔

مطیع اللہ کی اہلیہ کے مطابق وہاں موجود لوگوں نے انہیں بتایا کہ کچھ لوگ ان کے سکول کےباہر آئے تھے جہاں سے انہیں اٹھالیاگیا۔ واقعے کی سی سی ٹی وی بھی منظر عام پر آگئی ہے جس میں دیکھاجاسکتاہے کہ کچھ لوگ انہیں زبردستی سے اپنے ساتھ لے جارہے ہیں، سی سی ٹی وی فوٹیج کو متعدد سینیر صحافیوں نے اپنے ٹویٹر اکاونٹس پر شیئر کی ہیں۔

مطیع اللہ جان کی اہلیہ کے مطابق ان کے شوہر کی گاڑی سکول کے باہر ہی چھوڑ دی گئی، جس میں ان کے زیراستعمال ایک موبائل فون بھی موجود تھا جب کہ گاڑی میں چابی لگی ہوئی تھی۔

انہوں نےبتا یا کہ شوہر سے رابطہ نہ ہونے پر انہوں نے پولیس کو اطلاع کی جس پر سکیورٹی اہلکار وہاں پہنچ گئے۔

واضح رہے یہ واقعہ ایک ایسے وقت میں پیش آیا ہے جب ایک روز بعد مطیع اللہ جان کو سپریم کورٹ میں پیشی کے لیے حاضر ہونا تھا۔

گزشتہ دنوں چیف جسٹس آف پاکستان جسٹس گلزار احمد نے ایک کیس کی سماعت کے دوران سینیئر صحافی مطیع اللہ جان کی جانب سے ججز کے حوالے سے مبینہ ٹوئٹ کا ازخود نوٹس لیا تھا۔

سپریم کورٹ  میں ازخود نوٹس سماعت کے لیے مقرر کردیا گیا اور چیف جسٹس گلزار احمد کی سربراہی میں 3 رکنی بینچ نے کل  22 جولائی کو کیس کی سماعت کرنی ہے۔

اس ضمن میں اٹارنی جنرل، صحافی مطیع اللہ جان اور صدر سپریم کورٹ بار ایسوسی ایشن کو نوٹس جاری کردیے گئے ہیں۔

مزید :

علاقائی -اسلام آباد -