وزیراعظم عمران خان کی زیرصدارت وفاقی کابینہ کااجلاس،پی ٹی وی فیس میں اضافہ کامعاملہ موخر کردیا گیا

وزیراعظم عمران خان کی زیرصدارت وفاقی کابینہ کااجلاس،پی ٹی وی فیس میں اضافہ ...
وزیراعظم عمران خان کی زیرصدارت وفاقی کابینہ کااجلاس،پی ٹی وی فیس میں اضافہ کامعاملہ موخر کردیا گیا

  

اسلام آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن)وزیراعظم عمران خان کی زیرصدارت وفاقی کابینہ کے اجلاس میں تمام ایجنڈاآئٹمزکی منظوری دیدی جبکہ پی ٹی وی فیس میں اضافہ کامعاملہ موخر دیا گیا۔

نجی ٹی وی نے ذرائع کے حوالے سے کہاہے کہ وزیراعظم کی زیرصدارت وفاقی کابینہ اجلاس میں وزراءنے کہاکہ پی ٹی وی فیس میں اضافے سے متعلق عوامی نمائندوں کو اعتماد میں لیاجاناچاہئے تھا ،فیصل واوڈا،مرادسعید،فوادچودھری نے پی ٹی وی کی فیس میں اضافے پر اعتراض کیا۔وزراءکاکہناتھا کہ فیصلے سے قبل عوام کو بتایاجائے کہ سرکاری ٹی وی پر14 ارب کاخسارہ ہے ۔

فیصل واوڈا نے سوال کیا کہ حکومت کی میڈیا ٹیم بیانیہ بہترانداز میں کیوں پیش نہیں کر پارہی ؟،تعمیراتی انڈسٹری میں شاندار کامیابی حاصل کی لیکن عوامی سطح پر ذکر تک نہیں،وزیراعظم نے مشکل حالات میں کوششوں سے معیشت کو بحال کیا،حکومتی کارکردگی بہترلیکن میڈیا ٹیم کی کارکردگی مایوس کن ہے ۔

فیصل واوڈا نے کہاکہ حکومت نے ملک کومعاشی بحران سے باہر نکالا،معاشی ٹیم کیوں حکومت کے بیانیہ کو تقویت نہیں دے پارہی ؟،وفاقی وزرائے کی رائے دی کہ معاشی اورمیڈیا ٹیم حکومتی کامیابیوں پربات تک نہیں کررہی ،فیصل واوڈا نے کہاکہ بتادیں کابینہ میں غلط بیانی کی جارہی ہے اوراپوزیشن ٹھیک کہہ رہی ہے ،وزارت آبی وسائل نے نئے ڈیموں کی تعمیر سے متعلق انقلابی اقدامات کئے ہیں ۔

اسد عمر نے کہاکہ کوئی شک نہیں فیصل واوڈا کی وزارت کی کارکردگی بہتر ہے ،وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے کہاکہ ڈیم کے معاملے پر دہائیوں بعد کام کاآغاز ہوا ،وفاقی وزراءنے اسد عمر کی بات کی تائید کی ۔

وزراءنے کہاکہ معاونین اورمشیروں کے اثاثے غیرضروری ایشو بن گیا ہے ،وزیراعظم عمران خان نے کہاکہ درست کہہ رہے ہیں آپ کی وزارت نے مثالی اقدامات اٹھائے ہیں ،شاہ محمود قریشی نے بھی فیصل واوڈا کی وزارت کے اقدامات کی تعریف کی ۔

وفاقی وزرانے کہاکہ نان ایشوز کو ایشوز بنانے سے حکومتی بیانیہ کمزور ہوتا ہے ،معاونین اورمشیروں کے اثاثوں کامعاملہ غیرضروری طور پر ایشوبن گیا ۔

مزید :

قومی -علاقائی -اسلام آباد -