خواجہ برادران کیس کے تفصیلی فیصلے کے بعد ن لیگی رہنماﺅں نے نیب کے خلاف بڑا مطالبہ کردیا

خواجہ برادران کیس کے تفصیلی فیصلے کے بعد ن لیگی رہنماﺅں نے نیب کے خلاف بڑا ...
خواجہ برادران کیس کے تفصیلی فیصلے کے بعد ن لیگی رہنماﺅں نے نیب کے خلاف بڑا مطالبہ کردیا

  

اسلام آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن ) پاکستان مسلم لیگ نواز کے سینئر رہنماوں نے نیب کے ادارے کو ختم کرنے کا مطالبہ کردیا ہے۔اسلام آباد میں دیگر ن لیگی رہنماوں کے ہمراہ میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے ن لیگ کے رہنما اور رکن قومی اسمبلی خواجہ سعد رفیق نے کہا ہے کہ سپریم کورٹ کے فیصلے کے بعد نیب کو ختم کیا جانا چاہیے،احتساب کا نیا قانون بنانا ہوگا۔سعدرفیق نے کہا کہ پاکستان میں یہ سب پہلی بار نہیں ہورہا ہے۔ پہلےملک کے منتخب وزیراعظم کو نکالا گیا پھرکھیل آگے بڑھتاگیا۔انہوں نے کہا کہ سپریم کورٹ کا فیصلہ تاریخی ہے، یہ کیس انسانیت کی تذلیل ہے۔ یہ فیصلہ نیب کے کردار اور بدقسمت سیاسی تاریخ سے متعلق ہے۔ پاکستان بنانےوالوں کی اولادکےساتھ ریاست نے مسلسل بدسلوکی کی ہے۔ ہم ملک بنانے والوں کی اولاد ہیں ہر دور میں آمروں کا مقابلہ کیا۔لیگی رہنما نے کہا کہ ہمیں انصاف دینے میں تاخیرکی گئی،ہمیں پہلےانصاف ملناچاہیے تھا۔ آزادعدلیہ کیلئے ہم نے جیلیں کاٹیں، لیکن ہمیں انصاف ملنے میں تاخیرہوئی۔ن لیگ کے سینئر رہنما خواجہ آصف نے کہا کہ خواجہ سعدرفیق اورسلمان رفیق کوخراج تحسین پیش کرتاہوں۔ خواجہ برادران نے موجودہ گلے سڑے نظام کے خلاف صعوبتیں برداشت کیں۔انہوں نے کہا کہ عدالت نے سعد رفیق کیس پر تاریخ سازفیصلہ دیا۔ فیصلے سے لگتا ہے آنے والا وقت انصاف کا بول بالا ہوگا۔ جو کل تک ان کے حمایتی تھے آج ان پر تنقید کررہے ہیں۔ عدلیہ میں جانے والے اور انصاف کے طلب گار اس کیس کا حوالہ دیں گے۔ سابق وزیراعظم شاہدخاقان عباسی نے کہا کہ عدالتی فیصلے نے احتساب کا کھوکھلاپن عوام کے سامنے رکھ دیا۔سپریم کورٹ نےاپنے فیصلے میں تاریخی باتیں لکھی ہیں۔شاہدخاقان عباسی نے کہا کہ فیصلے کے بعد میں سمجھتا ہوں کہ نیب کی افادیت ختم ہوگئی ہے۔ سپریم کورٹ نےاپنے فیصلے میں نیب کی حقیقت بیان کی ہے۔

مزید :

قومی -