احتساب کا لگنے والا " تماشا " ختم ہونا چاہئے،حکومت نیب کا ادارہ ختم کرنے کا اعلان کرے ،شاہد خاقان عباسی قومی احتساب بیورو پر چڑھ دوڑے

احتساب کا لگنے والا " تماشا " ختم ہونا چاہئے،حکومت نیب کا ادارہ ختم کرنے کا ...
احتساب کا لگنے والا

  

اسلام آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن)پاکستان مسلم لیگ ن کے مرکزی رہنما اور سابق وزیراعظم شاہد خاقان عباسی نے کہا کہ سعد رفیق کے کیس میں سپریم کورٹ کا فیصلہ اس لیے تاریخی حیثیت رکھتا ہے کہ احتساب کا جو تماشا لگا ہوا ہے اس کا خاتمہ ہونا چاہیے،فیصلے میں کہا گیا کہ اقتدار کی ہوس اور اداروں پر قبضے نے حکمرانوں کو مجبور کردیا کہ وہ آئین و قانون کو پامال کریں۔

نجی ٹی وی کے مطابق اسلام آباد میں میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے سابق وزیر اعظم شاہد خاقان عباسی نے کہا کہ عدالت نے کہا کہ سعد رفیق کا کیس ایک واضح مثال ہے کہ کس طرح حکومت اور حکومتی ادارے آئین میں دیے گئے بنیادی حقوق کو پامال اور ہراساں کرتے ہیں، غیرقانونی حراست میں لیتے ہیں اور آزادی سےمحروم کرتےہیں اور آئین میں دیےگئےانسانی وقار کو پامال کرتے ہیں۔سابق وزیراعظم نے کہا کہ سپریم کورٹ نے نیب کےطرزعمل کےبارے میں جو باتیں لکھی ہیں وہ اتنی ٹھوس ہیں کہ آج نیب اور حکومت مل کر اس ادارے کوختم کرنے کافیصلہ کرلیں کیونکہ سپریم کورٹ یہ لکھ دیا ہے کہ یہ کیس قانون سے لاتعلقی ہے کہ نہ قانونی، اخلاقی اور آئینی قدروں اور 15 ماہ میں سعد رفیق کا کوئی تعلق ثابت نہیں کیا جاسکا۔

انہوں نے سعد رفیق کی ضمانت سے متعلق سپریم کورٹ کا تفصیلی فیصلہ پڑھ کر سناتے ہوئے کہا کہ یہ معاملہ اس کیس کا نہیں ہے، ہر کیس میں یہی حالت ہے، ہم نیب کیخلاف کھڑے ہوئے ہیں، بہت آسان تھاکہ ہم سر جھکالیتے۔شاہد خاقان عباسی کا کہنا تھا کہ ہمارا ان سے کوئی مطالبہ نہیں ہے اگر یہ فیصلہ پڑھ سکتے ہیں تو پڑھ لیں اور چلو بھر پانی میں ڈوب مریں، یہ ہمارے ملک کی حقیقت ہے جو سپریم کورٹ نے عیاں کی ہے ۔

مزید :

قومی -