عارف حمید نے سنہرے خوابوں کی تعبیربخش دی

عارف حمید نے سنہرے خوابوں کی تعبیربخش دی

ٹینس تیزی سے شہرت حاصل کرنے والے کھیل ہے اس کی وجہ اس کو ملنے والی بے پناہ پزیرائی ہے جس طرح اس کھیل کو پوری دنیا میں کھیلا اور پسند کیا جاتا ہے اسی طرح پاکستان میں بھی اس کھیل سے وابستہ ٹیلنٹ کی کمی نہیں ہے اور اس ٹیلنٹ کو جس طرح منظر عام پر لانے کے لئے اقدامات کئے جارہے ہیں وہ بھی قابل تعریف ہے اسی سلسلے کی کڑی پہلی ایس این جی بی ایل آل پاکستان رینکنگ ٹینس چیمپئن شپ ہے جس کے انعقاد کا مقصد اس کھیل کوتیزی سے فروغ دینے کے ساتھ ساتھ اس کھیل سے وابستہ ٹیلنٹ کو بھی سامنے لانا اور ان میں موجود صلاحیتوں کو ابھارنا ہے تاکہ وہ مستقبل میں عمدہ کھیل کی بدولت پاکستان کا نام پوری دنیا میں روشن کرنے میں کامیاب ہوسکیں اور پاکستان بھی اس کھیل میں دیگر ملکوں کی طرح شہرت حاصل کرسکے پہلی ایس این جی پی ایل آل پاکستان رینکنگ ٹینس چمپین شپ میں واپڈا کے کھلاڑیوں نے برتری ثابت کر دی واپڈا کے کھلاڑیوں نے چمپین شپ کے تینوں ٹائٹل مینز سنگل ، ویمنز سنگل اور مینز ڈبل اپنے نام کر لئیمینز سنگل کے فائنل میں واپڈا کے عقیل خان، ویمنز سنگل میں واپڈا کی خنشا بابر اور مینز ڈبل میں واپڈا ہی کے شہزاد خان اور یاسر خان فاتح رہے واپڈاکے کھلاڑیوں نے پہلی ایس این جی پی ایل آل پاکستان رینکنگ ٹینس چمپین شپ میں تینوں ٹائٹل جیت کر اپنی برتری ثابت کر دی۔ چمپین شپ کے اختتامی روز ، مینز سنگل کے فائنل میں واپڈا کے عقیل خان نے اپنے ہی ڈیپارٹمنٹ کے شہزاد خان کو 6-4 اور 6-3 سے شکست دی۔ قبل ازیں واپڈاہی کے کھلاڑی چمپین شپ میں مینز ڈبل اور ویمنزسنگل کے ایونٹس میں بھی فاتح رہے ۔مینز ڈبل کے فائنل میں واپڈا کے شہزاد خان اور یاسر خان نے واپڈا ہی کے عقیل خان اور ہیرا عاشق کو 6-4 اور 6-3 سے شکست دی۔ ویمنز سنگل کے فائنل میں واپڈا کی خنشا بابر نے واپڈا ہی سے تعلق رکھنے والی نور ملک کو 7-5 اور 6-2 سے شکست دے کر ٹائٹل اپنے نام کیا۔چمپین شپ میں واپڈا، پاکستان ایئر فورس ، زرعی ترقیاتی بنک اورسوئی نادرن گیس کے کھلاڑی شریک ہوئے ۔اس ٹورنامنٹ کے موقع پر ایم ڈی سوئی ناردرن گیس عارف حمید نے کہا کہ ادارہ ملک میں کھیلوں کو فروغ دینے کے لئے بھرپور اقدامات کررہا ہے اور اس کا ثبوت مختلف کھیلوں کے مقابلوں کا انعقاد کرنا ہے اور اس حوالے سے کئے جانے والے اقدامات سے ہم اپنے مقاصد کو پورا کررہے ہیں انہوں نے کہا کہ ملک میں کسی بھی کھیل میں ٹیلنٹ کی کمی نہیں ہے اور ٹینس کے کھیل میں بھی بے پناہ ٹیلنٹ چھپا ہوا ہے ایسے ایونٹس ہی اس ٹیلنٹ کو منظر عام پر لانے میں مدد گار ثابت ہوسکتے ہیں اور ہور ہے ہیں مستقبل میں اس کے مثبت نتائج برآمد ہوں گے جبکہ ہم مستقبل میں بھی اسی طرح کھیلوں کے فروغ کے لئے اپنا کردار بخوبی سر انجام دیتے رہیں گے ۔عارف حمید نے کہا کہ اس چیمپئن شپ میں 150کھلاڑی پانچ مختلف کیٹیگریوں میں شامل ہیں۔پبلک اور پر ائیو یٹ سیکٹر کو ملکی مفا د کیلئے ایسی سر گر میو ں کو خو ب سپور ٹ کر نا چاہئے۔ ایس این جی پی ایلکر کٹ ،ہا کی ، کبڈ ی ، فٹ با ل ،سکو اش وغیر ہ کیلئے پرُ عزم ہے ۔

انہوں نے کہا کہ جس طرح واپڈا سپورٹس کمپلیکس اور دیگر محکموں کے لئے کمپلیکس ہیں ہماری بھی خواہش ہے کہ اسی طرح ہمارے ادارے کا بھی سپورٹس کمپلیکس ہو تاکہ وہاں پر مختلف کھیلوں سے وابستہ کھلاڑیوں کو سیکھنے کا موقع مل سکے اور ان کی بہترین انداز میں تربیت ہو کھیلو ں میں پاکستان کسی سے پیچھے نہیں ہے انتظامی معاملات کو درست کرنے کی ضرورت ہے اور اس کے لئے ہمارا ادارہ بھرپور کردار ادا کررہا ہے انہوں نے مزید کہا کہ پاکستان میں یہ ادارہ کھیلوں کے لئے جو کام کررہا ہے اس کے مستقبل میں اچھے نتائج برآمد ہوں گے اور یہ سلسلہ ہم اسی طرح جاری رکھیں گے تاکہ کھیلوں کو فروغ مل سکے اور ہم اپنے مقاصد کو پورا کرسکیں انہوں نے کہا کہ اس ایونٹ میں جس طرح ٹینس کھلاڑیوں نے عمدہ کھیل پیش کیا اور پوزیشنیں حاصل کی ہیں یہ ان کی محنت کا صلہ ہے اس موقع پررشید ملک نے کہا کہ ٹینس کے کھیل کے لئے اس ایونٹ کے انعقاد سے بہت اچھے اثرات مرتب ہوں گے اور اس سے کھلاڑیو ں کواگے بڑھنے میں مدد ملے گی اور جس طرح اس ایونٹ کا انعقاد کیا گیا ہے اسی طرح مستقل میں بھی یہ سلسلہ جاری رکھا جائے گا اور سوئی ناردن گیس نے جس طرح اس ایونٹ کا انعقاد کیا ہے اس کی جتنی بھی تعریف کی کم ہے اور اسی طرح یہ ادارہ دیگر کھیلوں کی ترقی اور اس سے وابستہ کھلاڑیوں کو آگے لانے کیلئے اپنا بھرپور اندازمیں کردار ادا کررہا ہے وہ قابل تعریف ہے ۔

***

مزید : ایڈیشن 1