شوکت خانم میں 70فیصد مریضوں کا مفت علاج ہوتا ہے،عمران خان

شوکت خانم میں 70فیصد مریضوں کا مفت علاج ہوتا ہے،عمران خان

لاہور(پ ر)شوکت خانم کینسر ہسپتال کے سوا دنیا بھر میں کوئی ایسا ہسپتال نہیں جہاں پر 70فیصد مریضوں کا علاج مفت ہوتا ہو یہ بات عمران خان نے شوکت خانم ہسپتال کے زیر اہتمام گزشتہ روز ہونے والی افطار ڈنر کی تقریب کے موقع پر اپنے خطاب میں کہی۔ انہوں نے کہا کہ آج سے بیس سال قبل میں نے کینسر ہسپتال بنانے کا اعلان کیا تو لوگ کہتے تھے کہ یہ کیسے ممکن ہوگا آج ہزاروں کینسر کے مریض صحت یاب ہوچکے ہیں اور یہ سب کچھ عوام کی مدد سے ممکن ہوا ہے۔ انہوں نے مزید بتایا کہ اس سال پشاور میں کینسر ہسپتال فنکشنل ہوجائے گا جو پاکستان کا جدیدترین ہسپتال ہوگا اور اس کے قیام میں بھی عوام کی بھرپور مدد شامل ہے۔ اس موقع پر عمران خان نے 15لاکھ روپے زکوٰۃ فنڈ میں جمع کروائے تقریب کی میزبانی کے فرائض مشہور ٹی وی آرٹسٹ عائشہ ثناء نے انجام دئے۔ اس موقع پر ہسپتال کے چیف ایگزیکٹو آفیسر ڈاکٹر فیصل سلطان نے ہسپتال میں گزشتہ سال ہونے والی پیش رفت سے آگاہ کرتے ہوئے بتایاکہ ہسپتال اپنے قیام سے اب تک بیس سالوں میں کینسر کے علاج کیلئے 19 ارب روپے کی طبی و معالجاتی سہولیات فراہم کرچکا ہے۔ گزشتہ سال چار نئے آپریشن تھیٹرز کی تکمیل کی گئی، رحیم یار خان میں ڈائیگناسٹک لیب کا قیام عمل میں لایا گیا، ۔ عمران خان کی اپیل اور شوکت خانم ہسپتال کی کارکردگی کے سبب افطار ڈنر کے دوران 8کروڑ روپے کے فنڈ اکٹھے ہوئے ۔ یہ افطار ڈنر ہسپتال کے بہی خواہوں شاہد بٹ، انجم نثار، دانش منوں، زاہد الرحمن اور عرفان اقبال شیخ کی طرف سے دیا گیا۔

مزید : میٹروپولیٹن 1