فیڈریشن کاٹیم کی سلیکشن کے لیے کوئی طریقہ کار نہیں، شکیل عباسی

فیڈریشن کاٹیم کی سلیکشن کے لیے کوئی طریقہ کار نہیں، شکیل عباسی

اسلام آباد(آن لائن) قومی ہاکی ٹیم کے کھلاڑی شکیل عباسی نے کہا ہے کہ پاکستان ہاکی فیڈریشن کا قومی ٹیم کی سلیکشن کے لیے کوئی طریقہ کار نہیں ہے ، مجھے ٹیم سے باہر رکھنے کی وجہ نہیں بتائی گئی ہے ۔ ہفتے کو آن لائن سے گفتگو کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ 12سال سے پاکستان کیلئے ہاکی کھیل رہا ہوں پاکستان ہاکی فیڈریشن کی طرف سے ورلڈ لیگ نہ کھیلنے کی وجہ نہیں بتائی گئی جب کہ ایشین گیمز میں میری کارکردگی سب کے سامنے ہے انہوں نے کہا کہ پی ایچ ایف کو اپنے کھلاڑیوں کو عزت دینی چاہیے جبکہ ذاتی اختلافات کو دور رکھا جائے سب کو ملک کا سوچنا چاہیے ایک سوال کے جواب میں انہوں نے کہا کہ پاکستان کی اے ہاکی ٹیم میں سینئر کیا کھیلے گا کوچ کھلاڑی کو ہاکی نہیں سکھا سکتا نہ کھلاڑی سینئر کے ساتھ کھیل سکتا ہے ۔

انہوں نے کہا کہ ہمارے ہاں ہاکی کھلاڑی کی عمر 30سے 29سال ہوجاتی ہے اس کو فارغ کردیا جاتا ہے جبکہ دنیا کی ٹاپ ہاکی کی ٹیمیں جن میں بیلجئم ، ہالینڈ ، جرمنی ، آسٹریلیا وغیرہ شامل ہیں ان کے کھلاڑی اس سے زیادہ عمر کے ہوتے ہیں وہ ہاکی کھیل رہے ہیں ۔

مزید : کھیل اور کھلاڑی