چینی کمپنی نے دنیا کی بلند ترین عمارت تعمیر کرنے کا منصوبہ بنا لیا

چینی کمپنی نے دنیا کی بلند ترین عمارت تعمیر کرنے کا منصوبہ بنا لیا
 چینی کمپنی نے دنیا کی بلند ترین عمارت تعمیر کرنے کا منصوبہ بنا لیا

  

بیجنگ (نیوز ڈیسک) سعودی عرب کی طرف سے دنیا کی بلند ترین عمارت کی تعمیر کا منصوبہ سامنے کے بعد ایک چینی کمپنی نے اس سے کہیں پہلے دنیا کی بلند ترین عمارت چین میں تعمیر کرنے کا منصوبہ بنا لیا ہے۔ صرف 19 دنوں میں 57 منزلہ عمارت مکمل کرنے والی چینی تعمیراتی کمپنی نے اعلان کر دیا ہے کہ اس عمارت کو سالوں میں نہیں بلکہ صرف چند ماہ کے دوران تعمیر کر لیا جائے گا۔بی بی سی کے مطابق چینی کنٹریکٹر یانگ یوئی کا کہنا ہے کہ وہ سکائی سٹی کے نام سے 220 منزلہ عمارت بنائیں گے جس کی بنیاد چار ماہ میں جبکہ باقی مکمل عمارت محض تین ماہ میں تعمیر کی جائے گی۔ کنٹریکٹر کا کہنا ہے کہ وہ تعمیر کا ایک انقلابی طریقہ استعمال کریں گے جس میں پہلے سے تیار کئے گئے سٹیل کے بلاک استعمال کئے جائیں گے جنہیں ایک دوسرے کے ساتھ جوڑ کر عمارت تعمیر کی جائے گی۔ چینی کمپنی کے مطابق دنیا کی کوئی دوسری کمپنی رفتار میں ان کا مقابلہ نہیں کر سکتی۔ پری فیبریکیٹڈ بلاک تین اقسام کے ہوں گے جن میں ستون، کراس بیم اور فرش بنانے کے لئے استعمال ہونے والے بلاک شامل ہوں گے۔ ان بلاکس کے اندر نکاسی اور بجلی کی وائرنگ کا نظام بھی پہلے سے ہی نصب ہو گا۔ کمپنی نے منی سکائی سٹی کے نام سے تعمیر کی گئی اپنی عمارت کی تعمیر کے تمام مراحل کی ویڈیو بھی جاری کی ہے۔

مزید : علاقائی