کراچی میں تشدد میں شدت پسند تنظیمیں ، مذہبی گروپ ، سیاسی جماعتوں کے عسکری ونگ ملوث ہیں : امریکہ

کراچی میں تشدد میں شدت پسند تنظیمیں ، مذہبی گروپ ، سیاسی جماعتوں کے عسکری ...
 کراچی میں تشدد میں شدت پسند تنظیمیں ، مذہبی گروپ ، سیاسی جماعتوں کے عسکری ونگ ملوث ہیں : امریکہ

  

واشنگٹن ( آن لائن) امریکی محکمہ خارجہ نے اپنی سالانہ رپورٹ میں انسداد دہشت گردی کے لیے پاکستان کو انتہائی اہم ساتھی قرار د یتے ہوئے آپریشن ضرب عضب کوکامیاب قراد دیا ہے۔ سٹیٹ ڈیپارٹمنٹ کی فہرست میں شامل تعاون نہ کرنے والے ممالک کو سخت ترین امریکی پابندیوں کا سامنا کرنا پڑے گا۔ رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ پاکستان متعدد شدت پسند گروپوں کا مقابلہ کررہا ہے جن میں سے کئی پاکستانی حکومت یا  مذہبی فرقوں کو نشانہ بنا رہے ہیں۔

رپورٹ کے مطابق انسداد دہشت گردی کے سلسلے میں2014ءمیں پاکستان کا تعاون ملا جلا رہا پاکستان انسداد دہشت گردی کی تربیت دینے والے ٹرینرز کو ویزے دینے سے انکار کرتا رہا۔ کراچی کے بارے میں کہا گیا ہے کہ شہر میں مختلف گروپوں کے درمیان سیاسی اور لسانی تشدد جاری رہا جس میں عسکریت پسند تنظیمیں، شدت پسند مذہبی گروپ اور سیاسی جماعتوں کے عسکری ونگ ملوث رہے ہیں۔ کراچی کی سکیورٹی صورتحال پاکستانی قیادت کی ترجیحات میں رہی جس نے شہر میں دہشت گردوں اور جرائم پیشہ عناصر کے خلاف آپریشن کا آغاز کیا۔

پاکستانی فوج طالبان سمیت تمام کالعدم تنظیموں کے خلاف بلا تفریق آپریشن کررہی ہے جن ممالک میں دہشت گردی کے واقعات میں کمی واقع ہوئی ہے ان میں پاکستان سرفہرست ہے۔ دنیا میں دہشت گردی میں اضافہ جبکہ پاکستان میں کمی ہوئی۔ 2014ءمیں دہشت گردوں کے واقعات کے باعث 33 ہزار افرار مارے گئے۔ القاعدہ کی عالمی سطح پر شدت پسندی کی کارروائیوں میں کمی آئی ہے دولتِ اسلامیہ دنیا کا سب سے بڑا شدت پسند گروپ بن گیا ہے اس میں بڑی تعداد میں غیر ملکی جنگجو شامل ہو رہے ہیں۔’دسمبر کے آخر تک 16 ہزار غیر ملکی دہشت گرد شام گئے تعداد گذشتہ 20 سال میں کسی بھی عرصے کے دوران پاکستان، افغانستان، عراق، یمن اور صومالیہ جانے والے شدت پسندوں سے زیادہ ہیں۔ ’دولتِ اسلامیہ نے 2014 میں عراق اور شام میں غیر معمولی طور پر علاقوں پر قبضہ کیا ہے اس کی غیر ملکی شدت پسندوں کو بھرتی کرنے کی صلاحیت برقرار ہے۔ اس نے لیبیا، نائجیریا اور مصر میں اتحاد قائم کیا ہے۔

مزید : بین الاقوامی